ملتان سمیت جنوبی پنجاب کے مختلف علاقوں میں بارش‘ٹھنڈبڑھ گئی

  ملتان سمیت جنوبی پنجاب کے مختلف علاقوں میں بارش‘ٹھنڈبڑھ گئی

  



ملتان ‘ دائرہ دین پناہ ‘کہروڑ پکا ‘ ڈیرہ غازیخان ‘ راجن پور (سپیشل رپورٹر ‘ سٹاف رپورٹر ‘ نمائندہ خصوصی ‘ نیوز رپورٹر ‘ ڈسٹرکٹ رپورٹر ) ملک کے دیگر علاقوں کی طرح ملتان سمیت جنوبی پنجاب کے مختلف علاقوں میں گزشتہ بارش ہونے سے خشک سردی کا خاتمہ ہوگیا بار ش کے باعث سردی کی شدت میں اضافہ نے معمولات زندگی متاثر کردئیے ریلوے کا جدید سگنل سسٹم ، مسافر ٹرینوں کا شیڈول اور بجلی (بقیہ نمبر11صفحہ12پر )

نظام متاثر ہوا ، تفصیل کے مطابق ملتان سمیت جنوبی پنجاب کے اضلاع میں بادلوں کا راج دن بھر وقفہ وقفہ سے بارش کے باعث سردی کی شدت میں اضافہ ہوگیا ہے ۔ اس ضمن میں گزشتہ روز سے بادلوں ساتھ ساتھ دن بھر وقفہ وقفہ سے ہونے والی بارش کے باعث سردی کی شدت میں اضافہ ہوگیاہے جبکہ خشک سردی کی لہر میں کمی واقع ہوئی ہے تاہم دوسری جانب بارش کے باعث معمولات زندگی شدید متاثر ہوئے ہیں جبکہ شہریوں نے سردی کی شدت سے بچنے کیلئے گرم کپڑوں ،ہیٹر ،آنگھٹی سمیت دیگر اشیاء ضروریہ کا استعمال شروع کردیا ہے ۔ محکمہ موسمیات کے مطابق ملتان میں گزشتہ روز ہونے والی بارش مجموعی طور پر 16ملی میٹر ریکارڈ کی گئی جبکہ آج اور کل بھی بعض مقامات پر بارش کی پیشگوئی کی گئی ہے جس کے باعث سردی کی شدت میں مزید اضافہ ہوگا ۔ ملتان اور گردونواح میں بارش اور سردی کی شدید لہر کے باعث پرائیویٹ سکولوں ‘ کالجوں ‘ ٹیکنیکل و ووکیشنل اداروں اور یونیورسٹیوں میں طلباوطالبات کی حاضری کم رہی خصوصاً سکول جانے والے چھوٹے بچوں کو والدین نے چھٹی کرالی ‘ دوسری جانب بیشتر اساتذہ نے بھی چھٹی کرلی ۔ دریں اثنا ملک بھرکے دیگرحصوں کی طرح گزشتہ روزملتان اورنواحی علاقوں میں ہونے والی بارش نے ریلوے کے جدیدسگنل سسٹم کی قلعی کھل کررکھ دی ہے ۔ بتایا جاتاہے کہ بارش کے باعث لودھراں تاچیچہ وطنی مختلف مقامات پرسگنل سسٹم خراب ہوگیا ۔ جس کی وجہ سے مسافرٹرینوں کو پیپرلائن کلیئرکے تحت چلایاجارہاہے ۔ ریلوے ذراءع کے مطابق بارش کے باعث ریلوے کے انٹربیس لاکنگ سسٹم میں نمی آجاتی ہے ۔ جس کی وجہ سے سگنل سسٹم درست کام نہیں کرتا ۔ نمی ختم ہوتے ہی سسٹم خودبہ خودٹھیک ہوجائےگا ۔ آئندہ دوروزتک مزیدبارشوں کی پیش گوئی کومدنظررکھتے ہوئے ریلوے انتظامیہ نے ٹرین ڈرائیوروں اور دیگر آپریشنل سٹاف کوبھی الرٹ محفوظ ٹرین آپریشن جاری رکھنے کے لئے ہدایات جاری کی ہیں ۔ گزشتہ روزریلوے شعبہ سول انجینئرنگ کے گینگ مین بارش کے دوران ریلوے ٹریک سے نکاسی آب کے لئے کام کرتے رہے ۔ کنٹونمنٹ ایگزیکٹوآفیسرعثمان عارف نے گزشتہ روزہونے والی بارش کے بعدشعبہ سینیٹیشن کی طرف سے کینٹ کے مختلف علاقوں میں سے نکاسی آب کے لئے کئے جانے والے کام کاجائزہ لینے کے لئے مختلف علاقوں کادورہ کیاسینٹیشن سٹاف کوضروری ہدایات دیں کہ کسی بھی نشیبی علاقے میں پانی کھڑانہ ہونے دیاجائے ۔ بارش کے بعدکینٹ شعبہ سینٹیشن کی ٹی میں شیرشاہ روڈ،لال کرتی،قائداعظم روڈ،سی ایم ایچ چوک ،قاسم روڈ سمیت مختلف علاقوں سے نکاسی آب کے لئے کام کرتی رہی ۔ نکاسی آب کے لیے سکرمیشنوں کابھی استعمال کیاگیا ۔ ملک بھرکے بیشترعلاقوں میں گزشتہ روزہونے والی بارش کے باعث مسافرٹرینوں کاشیڈول بھی متاثرہواہے،گزشتہ روزتاخیرسے آنے والی گاڑیوں میں کراچی سے راولپنڈی جانے والی پاکستان 2گھنٹے45منٹ،راولپنڈی سے کراچی جانے والی پاکستان1گھنٹہ15منٹ،کوءٹہ سے پشاورجانے والی جعفر1گھنٹہ20منٹ،حویلیاں سے کراچی جانے والی ہزارہ1گھنٹہ10منٹ،اورکراچی سے پشاورجانے والی عوام ایکسپریس 1گھنٹہ کی تاخیرسے ملتان پہنچیں ۔ مسافرریل گاڑیوں کی تاخیرکے باعث مسافروں اوران کے عزیزاقارب کوپریشانی کاسامناکرناپڑا ۔ شہر میں دن بھرجاری بارش کےبعدجگہ جگہ پانی کھڑاہونےسےشہریوں کی موٹرسائیکل اورکاریں بندہوگئیں ۔ موٹرسائیکل اور کارمکینکوں کی چاندی ہوگئی ۔ مرمت کرنےوالوں نےمرضی کے ریٹ وصول کرناشروع کردئیے ۔ ملتان میں گذشتہ روزجاری بارش کےبعدشہرکی تما م سڑکوں پرپانی جمع ہوگیاجس سےمتعدد شہریوں کی موٹرسائیکل اور کاریں پانی میں بندہوگئیں ۔ بعدازاں مکینکوں نے گاڑیوں کی مرمت کےمرضی کےریٹ وصول کرنا شروع کردیئے ۔ شہریوں کا اس بارےکہناتھاکہ شہر میں موسلادھار بارش کےبعدسڑکیں تالاب کامنظر پیش کرنےلگتی ہیں لیکن انتظامیہ کےکانوں پرجوں تک نہیں رینگتی ۔ شہریوں نے انتظامیہ سے مطالبہ کیاکہ ناقص سیوریج پلان مرتب کرنےوالےاہلکاروں کوکٹہرے میں لایاجائے اور آئندہ سینئرشہریوں کی مشاورت سے سیوریج سسٹم کی بہتری اور سڑکوں کومزید کشادہ کرکےٹریفک کاجامع اور مستقل حل نافذ کیاجائے ۔ منیجنگ ڈائریکٹر واسا راؤ محمد قاسم کی ہدایت پر جمعرات کی علی الصبح ملتان میں ہونے والی بارش کے دوران واسا میں ہائی الرٹ جاری کر دیا گیا تمام سیوریج اور ڈسپوزل اسٹیشن ڈویژنوں کے افسران ،فیلڈ سٹاف اور مشینری کو ہنگامی بنیادوں پر ڈیوٹی کے لیے طلب کرکے شہر بھر کے مختلف علاقوں میں نکاسی آب کے لیے آپریشن شروع کردیا گیا اس دوران ایم ڈی واسا نے چونگی نمبر9 ،سورج میانی ڈسپوزل اسٹیشنوں ایم ڈی اے روڈ،کچہری روڈ،ایل ایم کیو روڈ، بوسن روڈ،گلگشت،دولت گیٹ، کلمہ چوک، پرانا بہاولپور روڈ، چوک رشید آباد، ابدالی روڈ،حسین آگاہی،گھنٹہ گھر، شاہین مارکیٹ، واٹر ورکس روڈ سمیت شہر کے مختلف علاقوں کا دورہ کرکے نکاسی آب کے انتظامات کا جائزہ لیا اس دوران کمشنر ملتان ڈویژن شان الحق،ڈپٹی کمشنر عامر خٹک اور ڈائریکٹر جنرل ایم ڈی اے آغا محمد علی عباس نے بارش کے پانی کی نکاسی سے متعلق ایم ڈی واسا راؤ محمد قاسم سے رپورٹ بھی طلب کی جبکہ ڈسپوزل اسٹیشنوں پر ریکارڈ کی گئی بارش سے متعلق رپورٹ بھی ایم ڈی واسا کوپیش کی گئی رپورٹ کے مطابق چونگی نمبر 9ڈسپوزل اسٹیشن پر 16ملی میٹر، سمیجہ آباد ڈسپوزل اسٹیشن پر 11ملی میٹر، کڑی جمنداں 12، پرانا شجاع آباد روڈ ڈسپوزل اسٹیشن پر 11 ملی میٹربارش ریکارڈ کی گئی ۔ کمشنر ملتان ڈویژن شان الحق نے واسا حکام کو ملتان میں ہونے والی بارش کے پیش نظر تمام مشینری فیلڈ میں بھیجنے کا حکم دیتے ہوئے کہا کہ ممکنہ طوفانی بارشوں کے پیش نظر واسا الرٹ رہے ۔ تیز بارش کے دوران واسا نکاسی آب کو ہر صورت یقینی بنائے ۔ تمام اہم شاہراءوں اور نشیبی علاقوں کو بارش کے پانی سے کلیئر کروایا جائے جبکہ تمام مشینری فنکشنل اور ڈسپوزل پر جنریٹرکا انتظام بھی کیا جائے ۔ کمشنر ملتان نے ضلعی افسران کو نکاسی آب کے عمل کی مانیٹرنگ کا ٹاسک سونپتے ہوئے کہا کہ وہ از خود شہر کا دورہ کر کے حالات مانیٹر کریں گے ۔ دائرہ دین پناہ میں صبح سویرے سے آسمان پر گہرے بادل چھا گئے صبح نماز کے ٹائم سے رم جھم لگ گئی جو سارا دن جاری رہی جس سے موسم مزید سرد ہوگیا اور سردی کی لہر میں اضافہ ہو گیا عوام نے گرم اشیاء خریدنا شروع کر دیئے انڈے ،مچھلی کی مانگ بڑھ گئی جس کے ریٹوں میں اضافی پایا گیا غریب عوام نے سردی سے بچنے کے لئے لنڈے بازار کا رخ کر لیا ۔ کہروڑپکا شہر اور گرد نواح میں موسم سرما کی پہلی بارش ۔ سردی میں اضافہ ۔ کاروبارز ندگی معطل ۔ تفصیل کے مطابق گزشتہ روز کہروڑپکا شہر اور گرد نواح میں دسمبر کی پہلی بارش ہوئی ۔ صبح سویرے شروع ہونے والی بارش شام تک وقفے وقفے سے جاری رہی ۔ بارش سے جہاں ایک طرف سردی کی شدت میں اضافہ ہوا وہیں کاروبار زندگی معطل ہو کر رہ گیا ۔ مارکیٹیں اور بازاروں میں گاہک نہ ہونے کے برابر رہے دوکاندار زیادہ وقت انگیٹھیوں پر بیٹھ کر چائے پی کر موسم سے لطف اندوز ہو تے رہے ۔ ماہرین کے مطابق حالیہ بارش سے نہ صرف گندم کی زیر کاشت فصل پر اچھے اثرات مرتب ہونگے بلکہ سموگ کا بھی خاتمہ ہو گا ۔ ڈیرہ غازیخان میں موسلادار بارش، موسم خوشگوار، سردی کی شدت میں اضافہ، ڈرائی فروٹیس کی طلب میں اضافہ، لنڈے بازار میں بھی رش، تفصیلات کے مطابق ڈیرہ غازیخان و گردونواح کے علاقے میں گزشتہ روز وقفے وقفے سے بارش کا سلسلہ جاری رہا ۔ جس سے ےہاں موسم میں تبدیلی آنے کے ساتھ سردی میں اضافہ ہوگیا ہے اس کے ساتھ ڈرآئی فروٹس کی دوکانوں پر رش بڑھ گیا اس کے ساتھ ھی لنڈے بازار کی رونقیں بھی بڑھ گئیں اور وہاں پر بھی خاصا رش دیکھنے کو ملا ۔ پرانے کپڑوں کی طلب میں اضافہ سے وہاں پر موجود دکانداروں نے بھی قیمیتوں میں یکدم اضافہ کر دیا ۔ گذشتہ روز ہو نے والی بارش نے میو نسپل کمیٹی کی کار کردگی کا پول کھول کررکھ دیا ، فتح پورروڈ ، ضیاء شہید روڈ ، ٹیلی فون ایکسچینج روڈ ، حکیم کالونی روڈ ، عاقل پورروڈ ، آسنی روڈ ، بند روڈ ، ٹھیڑی روڈ پر کئی کئی فٹ پانی جمع ہونے اور مٹی وکیچڑ کے جمع ہو نے سے شہریوں کی آمدورفت معطل ہوکررہ گئی فتح پورروڈ سے نکلنے والی بندروڈ پرواقع کالو نیوں کے مکین بندروڈ پر پانی وکیچڑ جمع ہو نے سے اپنے گھروں میں محصور رہے ۔

بارش

مزید : ملتان صفحہ آخر