وزیراعلٰی کا جاں بحق مریضوں کے لواحقین کیلئے 10.10لاکھ روپے امداد کا اعلان 

وزیراعلٰی کا جاں بحق مریضوں کے لواحقین کیلئے 10.10لاکھ روپے امداد کا اعلان 

  



لاہور(جنرل رپورٹر) وزیراعلیٰ عثمان بزدار نے سانحہ پنجاب انسٹیٹیوٹ آف کارڈیالوجی میں وکلاء کی ہنگامہ آرائی کے دوران جاں بحق مریضوں کے لواحقین کیلئے10،دس لاکھ روپے امداد کا اعلان کرتے ہوئے کہا ہے کہ امراض قلب کے ہسپتال میں ہنگامہ آرائی کرنیوالوں کیخلاف بلا امتیاز کارروائی ہو گی جبکہ امن و امان کی فضا برقرار رکھنے کیلئے ضروری اقدامات اٹھائینگے۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے کابینہ کمیٹی برائے امن و امان کے اجلاس  سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔اجلاس میں پی آئی سی میں پیش آنے والے افسوسناک واقعہ کے مختلف پہلوؤں اور کیس پر ہونے والی پیشرفت کا تفصیلی جائزہ لیا گیا۔وزیراعلیٰ نے ہنگامہ آرائی کے دوران بروقت علاج نہ ہونے سے کئی مریضوں کے جاں بحق ہونے کے واقعہ پرگہرے دکھ اورافسوس کا اظہار کرتے ہوئے کہاکہ ہماری تمام تر ہمدردیاں جاں بحق مریضوں کے لواحقین کے ساتھ ہیں۔ وزیر اعلی نے جاں بحق ہونے والے مریضوں کے لواحقین کیلئے مالی امداد کا اعلان کرتے ہوئے کہاکہ اگرچہ مالی امداد کسی انسانی جان کا نعم البدل نہیں لیکن ہم غمزدہ خاندانوں کے دکھ میں برابر کے شریک ہیں۔انہوں نے کہاکہ ڈاکٹروں اور دیگر لوگوں کی گاڑیوں کو پہنچنے والے نقصانات کا بھی ازالہ کیا جائے گا۔وزیر اعلی نے جاں بحق مریضوں کے لواحقین اور دیگر لوگوں کو آج مالی امداد ہر صورت دینے کی ہدایت کرتے ہوئے کہا کہ پنجاب انسٹی ٹیوٹ آف کارڈیالوجی میں آلات، مشینری اور دیگر سامان کو جلد ازجلد درست حالت میں لایا جائے اورپی آئی سی کی ایمرجنسی کو فنکشنل کرنے کیلئے ہنگامی بنیادوں پر تمام ضروری اقدامات اٹھائے جائیں۔انہوں نے کہا کہ پی آئی سی کی ایمرجنسی کی جلد بحالی اولین ترجیح ہے اور پنجاب حکومت ایمرجنسی سروسز کی بحالی کے لئے تمام ضروری وسائل فراہم کرے گی۔انہوں نے کہا کہ ہنگامہ آرائی کرنے والے عناصر کے خلاف بلا امتیاز کارروائی جاری رہے گی اور صوبے میں امن و امان کی فضا برقرار رکھنے کیلئے ہر ضروری اقدام اٹھایا جائے گا۔انہوں نے کہا کہ جن لوگوں نے زیادتی کی ہے ان سے کوئی نرمی نہیں برتی جائے گی لہٰذاقانون کے تحت کارروائی تسلسل کے ساتھ جاری رہے گی۔انہوں نے کہا کہ پنجاب انسٹیٹیوٹ آف کارڈیالوجی میں ہنگامہ آرائی اور توڑ پھوڑ کرنے والے عناصر سزا سے نہیں بچ پائیں گے۔پنجاب حکومت صوبے میں قانون کی عملداری یقینی بنائے گی،ہنگامہ آرائی اورتشدد کے ذمہ داروں کے خلاف قانون اپنا راستہ لے گا۔ انہوں نے کہاکہ ڈاکٹروں،پیرا میڈیکل سٹاف، مریضوں اوران کے لواحقین پر تشدد اورہسپتال میں توڑ پھوڑ کسی صورت قابل برداشت نہیں۔ہنگامہ آرائی کرنے والوں نے مریضوں اور ان کے لواحقین پر تشدد کرکے بدترین فعل کا ارتکاب کیا۔انہوں نے کہاکہ دل کے ہسپتال میں وکلاء کی ہنگامہ آرائی کے افسوسناک واقعہ کی انکوائری کا آغاز کردیا گیاہے اورکیمروں کی مدد سے ہسپتال میں ہنگامہ آرائی اورتشدد کے ذمہ داروں کی نشاندہی کا عمل شروع کردیاگیاہے۔ وزیر اعلی کو بریفنگ میں بتایا گیا کہ ہنگامہ آرائی کرنے والوں کے خلاف 2 مقدمات درج کر لئے گئے۔ پنجاب انسٹی ٹیوٹ آف کارڈیالوجی میں حفاظتی انتظامات کے تحت رینجرز کو تعینات کر دیا گیا ہے اور پنجاب کے تمام ہسپتالوں میں معمول کے مطابق کام ہو رہا ہے۔ہسپتال میں ہنگامہ آرائی کے دوران ٹوٹنے والے سامان کی مرمت اور تبدیلی کا کام شروع کر دیا گیا ہے۔بعدازاں وزیراعلیٰ پنجاب سے سپیکر پنجاب اسمبلی چودھری پرویز الٰہی نے ملاقات کی،دونوں رہنماؤں نے پی آئی سی میں ہنگامہ آرائی کے واقعہ کی شدید مذمت کرتے ہوئے ڈاکٹروں،پیرامیڈیکل سٹاف،مریضوں اور ان کے لواحقین کے ساتھ مکمل یکجہتی کا اظہار کیا،ملاقات میں باہمی دلچسپی کے امور،فلاح عامہ کے منصوبوں اور ورکنگ ریلیشن شپ کو بہتر بنانے کے حوالے سے بات چیت ہوئی۔وزیراعلیٰ عثمان بزدار نے اس موقع پر گفتگو کرتے ہوئے کہاکہ پی آئی سی کا افسوسناک واقعہ ایک ٹیسٹ کیس ہے،ذمہ دار عناصر قانون کی گرفت سے بچ نہیں سکیں گے،قانون سب کے لئے برابر ہے، بلاتفریق قانونی کارروا ئی ہوگی، صوبے میں قانون کی حکمرانی کو یقینی بنانے کیلئے آخری حد تک جائیں گے جبکہہسپتالوں میں مریضوں، ان کے لواحقین اور ڈاکٹروں کو پورا تحفظ دیں گے۔وزیراعلیٰ نے کہا کہ واقعہ انتہائی قابل مذمت ہے اور اس کی تحقیقات شروع ہو چکی ہیں لہٰذاذمہ دار اپنے انجام کو پہنچیں گے لیکنافسوس کامقام ہے کہ بعض عناصر نے اس واقعہ پر بھی سیاست چمکانے کی کوشش کی-وزیراعلیٰ نے کہاکہ اتحادی جماعت کو ہمیشہ کی طرح ساتھ لے کر آگے کی جانب چلتے جائیں گے اوراختلافات پیدا کرنے کی کوشش کرنے والے پہلے کامیاب ہوئے نہ اب ہوں گے- سپیکر پنجاب اسمبلی چودھری پرویز الٰہی نے اس موقع پرگفتگو کرتے ہوئے کہاکہ وکلاء کی ہنگامہ آرائی کا کوئی جواز نہیں بنتا تھا،مہذب معاشرے میں ایسے غیر انسانی فعل کی رتی بھر بھی گنجائش نہیں ہوتی کیونکہمریضوں کو علاج کی سہولت سے زبردستی روکنا مجرمانہ فعل ہے۔انہوں نے کہاکہ ہماری تمام تر ہمدردیاں متاثرہ لوگوں کے ساتھ ہیں جبکہوزیراعلی نے بروقت ہدایات دے کر اپنی ذمہ داریاں بطریق احسن ادا کیں -انہوں نے کہاکہ پنجاب کے عوام کو ریلیف دینے اور صوبے کی ترقی کے سفر میں ہم تحریک انصاف کے ساتھ کھڑے ہیں،پہلے بھی سپورٹ کیا ہے اور آئندہ بھی کرتے رہیں گے-انہوں نے کہاکہ غلط فہمیاں پیدا کرنے والے کبھی کامیاب نہیں ہوں گے کیونکہاپوزیشن محض نام کی رہ گئی ہے اب اپوزیشن کی سیاست صرف ذاتی مفادات کے گرد گھومتی ہے،صوبہ پنجاب کے عوام کی ترقی و خوشحالی کے لئے قدم سے قدم ملا کر چلیں گے۔رکن قومی اسمبلی مونس الہٰی او رپرنسپل سیکرٹری وزیراعلی بھی اس موقع پر موجود تھے۔

عثمان بزدار/پرویز الٰہی

مزید : صفحہ اول


loading...