اسلام آباد (اے پی پی) شیڈول بنکوں کے کھاتوں میں نیا سیمنٹ پلانٹ لگانے کیلئے کم پانی استعمال کیا جائے : میاں اسلم اقبال

  اسلام آباد (اے پی پی) شیڈول بنکوں کے کھاتوں میں نیا سیمنٹ پلانٹ لگانے کیلئے ...

  



لاہور (آن لائن) صوبائی وزیر صنعت وتجارت میاں اسلم اقبال کی زیر صدارت سول سیکرٹریٹ میں اعلی سطح کا اجلاس منعقد ہوا ۔ جس میں سیمنٹ انڈسٹری میں سرمایہ کا ری او ر نئے سیمنٹ پلانٹ لگانے کے حوالے سے امور کا جائزہ لیا گیا ۔ سیکرٹری صنعت وتجارت ،ڈی جی انڈسٹریز،ڈائریکٹر جنرل معدنیات ،کے علاوہ بلدیات ماحولیات اور محکمہ آبپاشی کے افسران نے اجلاس میں شرکت کی ۔ صوبائی وزیر میاں اسلم اقبال نے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ پنجاب حکومت نے 12 سال بعد سیمنٹ انڈسٹری پر پابندی اٹھائی ہے تاکہ یہ صنعت بھی معاشی سرگرمیوں میں اپنا حصہ ڈال سکے ۔ صوبائی وزیر نے کہا کہ محکمہ صنعت وتجارت میں سپیشل ہینڈلینگ سیل قائم کیا گیا ہے جو سیمنٹ پلانٹ لگانے کے امور دیکھے گا ۔ اس سپیشل ہینڈ لینگ سیل میں متعلقہ اداروں ،بلدیات ،آبپاشی ، ماحولیات اور معدنیات کے فوکل پرسنز بھی شامل کئے جائیں گے ۔ سیمنٹ پلانٹ لگانے کے لئے این اوسی کے حصول کے عمل کو آسان بنایا جائے گا ۔ میاں اسلم اقبال نے کہا کہ تمام متعلقہ ادارے مربوط انداز سے کام کریں گے اور سرمایہ کاروں کو سہولتیں دیں گے ۔ صوبائی وزیر نے ہدایت کی کہ سیمنٹ پلانٹ لگانے کے لئے درخواست دینے کے لئے محکمہ صنعت ایک خصوصی ایپ تیار کرے ۔ درخواست آنے کے بعد تمام ادارے ٹائم لائن کے اندر کام مکمل کرنے کے پابند ہوں گے ۔ وزیر صنعت نے کہا کہ سیمنٹ پلانٹ لگانے کے لئے ایسی ٹیکنالوجی کو ترجیحی دی جائے جس میں پانی کم سے کم استعمال ہو ۔ صنعتیں لگانے کے لئے این او سی کے حصول میں کئی ماہ لگ جانا افسوسناک ہے ۔

اورآئند اجلاس میں تمام متعلقہ محکمے اپنی ورکنگ مکمل کر کے آئیں ۔

وزیر صنعت نے کہا کہ سرمایہ کاروں کو سہولتیں دینا اداروں کی ذمہ داری ہے ،سرمایہ کاری کے عمل میں رکاٹیں کسی صورت برداشت نہیں ۔

مزید : کامرس


loading...