”میں ٹیسٹ کرکٹر بننا چاہتاتھا اور والد صاحب پولیس میں تھے “ علیم ڈار نے دلچسپ انکشاف کر دیا

”میں ٹیسٹ کرکٹر بننا چاہتاتھا اور والد صاحب پولیس میں تھے “ علیم ڈار نے ...
”میں ٹیسٹ کرکٹر بننا چاہتاتھا اور والد صاحب پولیس میں تھے “ علیم ڈار نے دلچسپ انکشاف کر دیا

  



لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن) سب سے زیادہ ٹیسٹ میچوں میں امپائرنگ کے فرائض سرانجام دینے والے علیم ڈار کا کہنا ہے کہ وہ ٹیسٹ کرکٹر بننا چاہتے تھے اور ان کے والد پولیس میں تھے جن کی مختلف جگہوں پر پوسٹنگ ہوتی رہی جہاں کرکٹ کھیلنے کے مواقع نہیں ملتے تھے، لہٰذا وہ لاہور آ گئے۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کو دئیے گئے انٹرویو میں علیم ڈار نے کہا کہ مجھے وہ وقت اچھی طرح یاد ہے جب اسلامیہ کالج سول لائنز کی ٹیم میں بیٹسمین کی حیثیت سے منتخب ہوا اور وسیم اکرم کا انتخاب باﺅلر کے طور پر ہوا تھا۔علیم ڈار نے اپنی کلب کرکٹ پی اینڈ ٹی جمخانہ کی طرف سے کھیلی لیکن ان کا فرسٹ کلاس کیرئیر 17 میچوں سے آگے نہ بڑھ سکا۔

علیم ڈار نے کرکٹ سے اپنا تعلق برقرار رکھنے کے خیال سے امپائرنگ کو اپنانے کا فیصلہ کرلیا اور صرف ایک سال کے مختصر سے عرصے میں وہ انٹرنیشنل امپائر بن گئے اور پھر انٹرنیشنل کرکٹ کونسل (آئی سی سی) نے انہیں اپنے ایلیٹ پینل میں شامل کر لیا اور آج وہ دنیا کے بہترین امپائرز میں سے ایک ہیں۔

مزید : کھیل


loading...