’میں نے ٹرمپ کو 2 مرتبہ دیوالیہ ہونے سے بچایا‘ سعودی شہزادہ ولید بن طلال کا تہلکہ خیز انکشاف

’میں نے ٹرمپ کو 2 مرتبہ دیوالیہ ہونے سے بچایا‘ سعودی شہزادہ ولید بن طلال کا ...
’میں نے ٹرمپ کو 2 مرتبہ دیوالیہ ہونے سے بچایا‘ سعودی شہزادہ ولید بن طلال کا تہلکہ خیز انکشاف

  



جدہ(مانیٹرنگ ڈیسک) امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ ایک ارب پتی شخص ہیں اور دنیا بھر میں ان کا کاروبار پھیلا ہوا ہے تاہم اب سعودی عرب کے ایک ارب پتی شہزادے نے ان کے متعلق ایسا دعویٰ منظرعام پر آ گیا ہے کہ امریکہ میں ہلچل مچ گئی۔ یہ شہزادہ الولید بن طلال ہیں جنہوں نے 2016ءمیں ترک اخبار ’حریت‘ کو انٹرویو دیتے ہوئے صدر ٹرمپ کو ’برا‘ اور ’ناشکرا‘ شخص قرار دیا تھا اورکہا تھا کہ انہوں نے ٹرمپ کو دو بار دیوالیہ ہونے سے بچایا۔

سعودی عرب کے امیر ترین شخص شہزادہ الولید کا کہنا تھا کہ ”ایک بار قرض ادا نہ کر پانے کی وجہ سے بینکوں نے ڈونلڈٹرمپ کے ہوٹل ضبط کر لیے تھے اور وہ دیوالیہ ہونے کے قریب تھے۔ اس وقت میں نے ان کے وہ ہوٹل خریدے اور انہیں دیوالیہ ہونے سے بچا لیا۔ دوسری بار جب وہ دیوالیہ ہونے لگے تو میں نے ان سے ان کی لگژری کشتی خریدی جو اب بھی میرے پاس ہے اور میں اکثر اسی پر ترکی کے ساحلی شہر انتالیا سیاحت کے لیے آتا ہوں۔“

واضح رہے کہ یہ انٹرویو اس وقت دیا گیا جب صدر ڈونلڈٹرمپ امریکی صدارت کے امیدوار تھے اور انتخابی مہم چلا رہے تھے۔ اس انٹرویو سے قبل الولید بن طلال نے انہیں امریکہ اور ری پبلکن پارٹی کے لیے دھبہ قرار دیتے ہوئے ان سے صدارتی دوڑ سے باہر ہو جانے کا مطالبہ بھی کیا تھا۔ یہ وہی شہزادہ الولید ہیں جنہیں بعد ازاں ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان نے دیگر سینکڑوں لوگوں کے ہمراہ قید رکھا اور سعودی حکومت کے ساتھ اربوں روپے کی ڈیل کرکے انہیں رہائی ملی تھی۔

مزید : عرب دنیا


loading...