ملک میں جوکچھ ہورہاہے ، میں ذمہ دارنہیں ہوں، معاون خصوصی برائے احتساب

ملک میں جوکچھ ہورہاہے ، میں ذمہ دارنہیں ہوں، معاون خصوصی برائے احتساب
ملک میں جوکچھ ہورہاہے ، میں ذمہ دارنہیں ہوں، معاون خصوصی برائے احتساب

  



اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن)معاون خصوصی برائے احتساب شہزاد اکبر نے کہاہے کہ ملک میں جوہورہاہے مجھ کواس کا ذمہ دار نہ ٹھہرائیں ،35سال اقتدار میں رہنے والوں نے سرکاری زمینوں پر قبضہ کیا۔

اسلام آباد میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے شہزاداکبر نے کہاہے کہ شہباز شریف 18سالوں کے جواب نہیں دے رہے ،حیرت ہے شہباز شریف کو تلاش کررہا ہوں اور اس کاجواب نہیں مل رہا۔ن لیگ کی بی ٹیم سارا ملبہ قائدین پر ڈال دیتی ہے ، ن لیگ کی بی ٹیم کے بھی بڑے کارنامے ہیں، ان کوتکلیف ہے کہ ان کے کارنامے پکڑے جارہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ 35سال اقتدار میں رہنے والوں نے سرکاری زمینوں پر قبضہ کیا۔

شہزاد اکبر کا کہنا تھا کہ سرکاری اراضی کی واگزاری پر واویلہ کیاجارہاہے ، ایسٹ ریکوری یونٹ کا مقصد لوٹی ہوئی دولت واپس لاناہے، ایسٹ ریکوری یونٹ کو وفاقی کابینہ نے قائم کیاہے اور اس کا مقصد بیرون ملک سے لوٹی ہوئی دولت واپس لاناہے۔ جب ان کے لیڈر کوسزا ہوئی تو یہ مٹھائیاں بانٹ رہے تھے ۔ انہوں نے کہا کہ مریم اورنگ زیب نے اثاثوں کی ریکوری پر سوالات اٹھائے ہیں،پارلیمنٹ میں ایک سوال کولیکر مریم نواز نے پریس کانفرنس کی ہے ،مریم اورنگزیب قوم کو گمراہ کرناچھوڑ دیں اور شہباز شریف سے میرے سوالوں کاجواب دلوادیں۔انہوں نے کہا کہ 129ارب روپے کی زمین پنجاب میں واگزار کروائی گئی ۔ ایک صاحب نے سرکاری زمین پر قبضہ کرکے پٹرول پمپ بنایا تھا ، اب ا گر سرکاری زمینوں سے قبضے چھڑائے جارہے ہیں تو اس میں میراقصور نہیں ہے، ملک میں جوہورہاہے مجھ کواس کاذمہ دار نہ ٹھہرائیں۔انہوں نے کہا جن پیسوں کی ریکوری ہوتی ہے ، وہ قومی خزانے میں جمع کروائے جاتے ہیں۔ اس دور حکومت میں ہم سے جوسوال کیاجاتاہے ہم فوری اس کاجواب دیتے ہیں۔ن لیگ اپنی قیادت سے پوچھے کہ نثار گل کون تھے ، شہباز شریف سے تقاضہ کیاجارہاہے کہ زیر قبضہ اراضی کا حسا ب دیں۔انہوں نے کہاکہ جب سے ہم نے اداروں کے آزاد کیاہے بہتر نتائج آنا شروع ہوگئے ہیں۔

مزید : اہم خبریں /قومی


loading...