ایٹمی ہتھیار حرام ہیں،نہیں بنا نا چاہتے:علی لاریجانی

ایٹمی ہتھیار حرام ہیں،نہیں بنا نا چاہتے:علی لاریجانی
ایٹمی ہتھیار حرام ہیں،نہیں بنا نا چاہتے:علی لاریجانی

  


اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک)ایرانی مجلس شوری کے سپیکر علی لاریجانی نے کہا ہے کہ ایٹمی ہتھیار انسانی جانوں کی تباہی کا موجب ہو نے پر حرام ہے اس لیے ایران ایٹمی ہتھیار بنانے کے حق میں نہیں ہے جبکہ ایرانی سپریم کونسل کے لیڈرعلی خامنہ ای نے فتویٰ بھی دیا تھا کہ ایٹمی ہتھیار وسیع پیمانے پر انسانی ہلاکت کا باعث بن سکتے ہیںاور جو چیز انسانیت کش ہو وہ جائز نہیں حرام ہے اس لیے یہ ممکن نہیں کہ ایران اپنے لیڈر کے فتو ے کے خلاف ایٹمی ہتھیار بنائے البتہ ایران ایٹمی استعداد رکھتا ہے جو خالصتاً پر امن مقاصد کے لیے ہے۔یہاں پریس کانفرنس میں ان کا کہنا تھا مسلمان ممالک کو متحد ہوکر تمام فتنوں سے نبردآزما ہونا ہے اور پاکستان اور ایران کے تعلقات برادرانہ اور دوستانہ ہیں۔گیس پائپ لائن منصوبے کو مکمل کرنے کے لئے پاکستان کو امریکہ کے دباو¿ سے نکلنا ہوگا۔ان کا کہنا تھا گیس پائپ لائن منصوبے پرایران اپنے حصے کا کام مکمل کر چکا ہے۔ان کا کہنا تھا کہ ایران نہیں سمجھتا کہ کسی منصوبے پرامریکہ کی توثیق لینا ضروری ہے۔ انہوں نے کہا کہ افغانستان کے نقصانات کا ذمہ دار امریکہ ہے۔ امریکہ نے افغانستان کے استحکام کے لئے کوئی کام نہیں کیا۔ایک سوال پر ایرانی سپیکر کا کہنا تھا کہ اسرائیل یا امریکہ کبھی ایران پر حملہ کرنے کی غلطی نہیں کرے گا۔ ایسی حرکت دونوں ممالک کی سلامتی کو خطرے میں ڈال دے گی۔ ان کا کہنا تھا کہ ایران اور پاکستان کے درمیان یونیورسٹی کی سطح پر طلباءکا تبادلہ دونوں ممالک کے عوام کو قریب لانے کا سبب بنے گا۔

مزید : بین الاقوامی