صدر کی لاہور میں موجودگی سے سیاسی محاذ بھرپور انداز میں گرم

صدر کی لاہور میں موجودگی سے سیاسی محاذ بھرپور انداز میں گرم

لاہور (جنرل رپورٹر) پاکستان پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری اور شریک چیئرمین و صدر مملکت آصف علی زرداری کی لاہور میں موجودگی نے سیاست کا محاذ بھرپور انداز میں گرم کردیا ہے اور لاہور میں بیٹھ کر پاکستان پیپلز پارٹی نے آئندہ انتخابات 2013ءکی انتخابی حکمت عملی طے کرلی ہے جس کے مطابق آئندہ انتخابی ”مورچہ“ لاہور میں لگایا جائے گا اور پنجاب پر فوکس کیا جائے گا اور مسلم لیگ ن کے گرد زیادہ سے زیادہ گھیرا تنگ کیا جائے گا اور مسلم لیگ ن کو سیاسی طور پر زیادہ سے زیادہ نقصان پہنچانے کا باعث اور سودمند ثابت ہونے والی سیاسی مذہبی ”قوتوں“ کو متحرک کیا جائے گا۔ مسلم لیگ ق کو ہرحال میں ساتھ رکھا جائے گا۔ مستقبل قریب میں پاکستان تحریک منہاج القرآن، جے یو آئی ف سے تعلقات بڑھانے کے لئے بھی باضابطہ اور عملی کوششیں کی جائیں گی۔ دوسری طرف لاہور، پورے پنجاب میں مسلم لیگ ن کے مقابلے میں مضبوط ترین امیدواروں کو سامنے لانے کے لئے ان سے انٹرویو کا سلسلہ شروع کرنے کا ٹاسک بلاول بھٹو زرداری کو سونپ دیا گیا ہے۔ ذرائع نے بتایا ہے کہ صدر نے پنجاب کے ڈویژنل اور ضلعی تنظیموں کو پوری طرح فعال کرنے کا حکم دیا ہے اور آئندہ انتخابات میں ہر حلقہ کے اندر عوامی مقبولیت رکھنے والے امیدواروں کے لئے سفارشات تیار کرنے کا ٹاسک ضلعی تنظیموں کودیا گیا ہے جو پارٹی چیئرمین کو وسطی پنجاب کے صدر میاں منظور وٹو کی وساطت سے رپورٹس پیش کریں گے۔ ذرائع نے بتایا ہے کہ صدر نے اپنی غیر موجودگی میں مرکزی رہنما فریال تالپور کو لاہور میں زیادہ وقت گزار کر پارٹی متحرک کرنے کا ٹاسک دیا ہے۔ ذرائع نے دعویٰ کیا ہے کہ دیگر پارٹیوں سے زیادہ سے زیادہ لوگوں کو ساتھ ملانے کے لئے بھی رابطہ کمیٹی بنا دی گئی ہے۔ دوسری طرف صدر کی لاہور میں مستقل موجودگی نے سیاست کا محاذ ایک مرتبہ پھر گرم کردیا ہے۔ نواز شریف سندھ جبکہ صدر مملکت پنجاب پرفوکس کئے ہوئے ہیں۔

سیاسی محاذ گرم

مزید : صفحہ اول