سندھ کے نجی سکول تیس فیصد بچوں کو مفت پڑھانے کے پابند

سندھ کے نجی سکول تیس فیصد بچوں کو مفت پڑھانے کے پابند
سندھ کے نجی سکول تیس فیصد بچوں کو مفت پڑھانے کے پابند

  


کراچی (مانیٹرنگ ڈیسک) سندھ اسمبلی میں پانچ سال سے 16 سال کے عمر کے بچوں کیلئے مفت تعلیم کا بل منظور کر لیا گیا ہے جس کے مطابق نجی سکول بھی 30 فیصد بچوں کو بغیر فیس پڑھانے کے پابند ہوں گے۔ بل کے مطابق بچوں کو سکول نہ بھیجنے والے والدین پر پانچ ہزار جرمانہ یا تین ماہ قید ہو گی۔ ڈائریکٹر سکول سندھ کے مطابق یہ قانون اپریل کے نئے تعلیمی سال سے لاگو ہو گا۔اس بل کے ذریعے نجی سکولوں کو بھی 30 فیصد بچوں کو بغیر فیس پڑھانے کا پابند کیا گیا ہے جبکہ اس قانون پر عمل نہ کرنے والے سکول مالکان پر پچاس ہزار یا اس سے زائد جرمانہ کیا جائے گا۔ دوسری جانب نجی سکول مالکان نے 30 فیصد بچوں کو مفت تعلیم کا قانون مسترد کرتے ہوئے کہا ہے کہ اس قانون سے دس ہزار سے زائد چھوٹے نجی سکول ہمیشہ کیلئے بند ہو جائیں گے۔

مزید : تعلیم و صحت