بھارتی حکومت نے جموں کشمیر کو عملا قید خانے میں تبدیل کردیا ہے‘ پوری قوم کو پابند سلال رکھکر ہٹلر کو بھی مات دی ہے‘ سید علی گیلانی

بھارتی حکومت نے جموں کشمیر کو عملا قید خانے میں تبدیل کردیا ہے‘ پوری قوم کو ...

  سرینگر(کے پی آئی) کل جماعتی حریت کانفرنس گ کے چیئرمین سید علی گیلانی نے کہا ہے کہ بھارتی حکومت نے ریاست جموں کشمیر کو عملا قید خانے میں تبدیل کردیا ہے اور پوری قوم کو پابند سلال رکھکر ہٹلر کو بھی مات دی ہے۔ سید علی گیلانی نے اس ظلم وجبر، بربریت، آمریت کے خلاف عوامی مزاحمت کو جائز قرار دیا ہے اور ریاست کے امن کو تباہ کرنے کی تمام تر ذمہ داری حکومت پر عائد کرتے ہوئے کہا کہ حکومت نے ریاست جموں کشمیر کو عملا قید خانے میں تبدیل کردیا ہے اور پوری قوم کو پابند سلال رکھکر ہٹلر کو بھی مات دی ہے۔انہوں نے کہا کہ فوجی طاقت کا بھرپور استعمال کرکے ریاست کے طول عرض میں دہشت اور ظلم وبربریت کا ننگا ناچ کھیلا جارہا ہے، لوگوں کو خوف زدہ کیا جارہا ہے، رات کے اندھیرے میں فورسز گھروں کے اندر گھس کر انسانی حقوق کی سنگین پامالیوں کے مرتکب ہورہے ہیں۔انہوں نے کہا کہ ایچ ایم ٹی، زینہ کوٹ، نواکدل، نوابازاراور سرینگر کے دوسرے مقامات پر فورسز کی طرف سے بلاجواز چھاپے اور گرفتاریاں عمل میں لائی جارہی ہیں، جبکہ پلہالن میں بلاجواز کرفیو لگا کر لوگوں کو نان شبینہ کے لیے ترسایا جارہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ قوم اس طرح کی آمریت کو برداشت نہیں کرے گی کہ نام نہاد امن کی آڑ میں لوگوں کو اپنے جگر گوشوں کی لاشیں اٹھانے کی اجازت بھی نہیں ہوگی اور اس پر مستزاد یہ کہ پھر نام نہاد کمیشن مقرر کرکے قاتل اور ظالم کو باعزت بری کرکے مقتول اور مظلوم سے ہی تلوار کے خم کا تاوان بھی وصول کیا جائے گا۔ حریت چیرمین نے فاروق احمد بٹ پلہالن کے قتل پر بنائے گئے سرکاری کمیشن کو مکمل طور مسترد کرتے ہوئے کہا کہ ریاست جموں کشمیر میں کمیشنوں کی حیثیت کی کوئی اعتباریت ہی نہیں ہے اور قاتل ہی کو منصف بنانا کہاں کا انصاف ہے، بھارت کی جموں کشمیر میں ان کمیشنوں کی تاریخ کا سیاہ باب دنیا کے سامنے ہے اور اس کمیشن کا حشر بھی وہی ہوگا جو آج تک کے کمیشنوں کا ہوا ہے، یہ صرف وقت گزاری اور توجہ ہٹانے کی ساہوکاری ہے۔

مزید : عالمی منظر