رنویرسنگھ کی ڈپریشن بارے رپورٹ کی اشاعت پر شدید تنقید

رنویرسنگھ کی ڈپریشن بارے رپورٹ کی اشاعت پر شدید تنقید
رنویرسنگھ کی ڈپریشن بارے رپورٹ کی اشاعت پر شدید تنقید

  

 ممبئی (این این آئی)بولی وڈ اداکار رنویر سنگھ نے ہندوستان کے ایک بڑے اخبار میں اپنے ڈپریشن میں مبتلا ہونے سے متعلق رپورٹ کی اشاعت پر شدید تنقید کی ہے۔واضح رہے کہ مذکورہ اخبار میں رنویر سنگھ کے ڈپریشن میں مبتلا ہونے کی خبر کو کافی بڑھا چڑھا کر پیش کرتے ہوئے اس کا تعلق بولی وڈ اداکارہ دپیکا پڈوکون سے جوڑ دیا گیا تھا۔یاد رہے کہ کچھ عرصہ قبل دپیکا پڈوکون نے اس بات کا اعتراف کیا تھا کہ وہ اپنے قریبی دوست کی خود کشی کے بعد ڈپریشن کا شکار ہوگئی تھیں۔مذکورہ رپورٹ میں بتایا گیا کہ صرف دپیکا ہی ڈپریشن میں مبتلا نہیں ہیں بلکہ رنویرسنگھ بھی اس کی لپیٹ میں ہیں، حتیٰ کہ وہ اس سلسلے میں ایک تھراپسٹ سے بھی مل چکے ہیں۔اس رپورٹ کے شائع ہونے کے بعد رنویر سنگھ نے سوشل میڈیا پر اس حوالے سے مذکورہ اخبار کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے لکھا کہ پیر کا اخبار اٹھائیں اور میرے ڈپریشن میں مبتلا ہونے اور ایک انتہائی ذاتی مسئلے سے متعلق افسانوی کہانی پڑھیں۔انھوں نے مزید لکھا ہے کہ سب سے زیادہ بدتر تو یہ ہے کہ اسے کسی دوسرے فرد کے مسئلے سے جوڑ دیا گیا، جن کا ایک دوسرے سے کوئی تعلق نہیں اور اسے جذباتی طور پر بھڑکانے کی کوشش کی گئی، جبکہ اس کہانی کو مزید ڈرامائی موڑ دینے کے لیے اس میں تھراپسٹ کا عنصر بھی شامل کردیا گیا۔رنویر مزید لکھتے ہیں کہ اس خبر کی مجھ سے یا میرے کسی نمائندے سے تصدیق کرنے کی بھی زحمت نہیں کی گئی۔ یہ خالصاً ایک غیر ذمہ دارانہ صحافت ہے۔اس حرکت کو غیر اخلاقی قرار دیتے ہوئے رنویر نے سوال کیا کہ یہ قلم کی طاقت ہے یا پھر قلم کا خوف ؟ اور اس کا کوئی احتساب بھی ہے؟

مزید : کلچر