سوئس بینکوں میں اربوں ڈالر!

سوئس بینکوں میں اربوں ڈالر!

یورپ میں صحافیوں کی غیر جانبدار تنظیم کے رکن صحافیوں کے ایک گروپ نے سوئس بینکوں میں غیر ملکیوں کے ناجائز سرمائے کی موجودگی کے حوالے سے تحقیق کی، اس تحقیقاتی ٹیم کی رپورٹ کے مطابق سوئس بینکوں میں دنیا کے قریباً تمام ممالک کے بااثر حضرات کے خفیہ اکاؤنٹ ہیں، ان میں پاکستان کے لوگ بھی شامل ہیں، جن کے ایک ارب ڈالر جمع ہیں اور پاکستان کا رقم رکھنے والے ممالک میں 48واں نمبر ہے۔سابقہ دور حکومت (پیپلزپارٹی) کے دوران یہ الزام لگایا جاتا رہا ہے کہ پاکستان کے سیاست دانوں اور بعض کرپٹ بیورو کریٹ حضرات کے خفیہ اکاؤنٹ سوئس بینکوں میں ہیں۔ سرفہرست آصف علی زرداری کا نام لیا جاتا تھا۔کچھ عرصہ قبل وفاقی وزیر خزانہ اسحاق ڈار نے یہ بیان دے کر چونکا دیا تھا کہ سوئس بینکوں میں پاکستانیوں کے دو سو ارب ڈالر جمع ہیں جو واپس لائے جائیں گے، اس سلسلے میں یہ خبر بھی شائع ہوئی کہ سوئس حکومت کو خط لکھا گیا ہے کہ حکومت کو تفصیلات سے آگاہ کیا جائے، انہوں نے یہ دو سو ارب ڈالر واپس لانے کا بھی اعلان کیا تھا، پھربات خط والی خبر تک محدود ہو کر رہ گئی۔ اب تو غیر ملکی غیر جانبدار صحافیوں کی رپورٹ ہے کہ ایک سو ارب ڈالر پاکستانیوں کے ہیں، وزیر خزانہ اسحاق ڈار کو یہ رقوم واپس لانے کا اہتمام کرنا چاہیے۔

مزید : اداریہ