حبیب بینک،دراز ڈاٹ پی کے اور مونیٹ کے درمیان معاہدہ

حبیب بینک،دراز ڈاٹ پی کے اور مونیٹ کے درمیان معاہدہ
حبیب بینک،دراز ڈاٹ پی کے اور مونیٹ کے درمیان معاہدہ

  

لاہور( پ ر)پاکستان کے سب سے بڑے بینک حبیب بینک لمیٹیڈ نے پاکستان کے سب سے بڑے آن لائن اسٹور دراز ڈاٹ پی کے کو صارفین کو گھر پر اشیا کی فراہمی کے دوران کریڈٹ اور ڈیبٹ کارڈ قبول کرنے کی سہولت فراہم کر دی ہے۔ یہ پیشرفت حبیب بینک کی Mobile POS))mPOS سروس کے ذریعے ممکن ہو سکا ہے جسے حال ہی میں لانچ کیا گیا ہے۔mPOS سہولت کے ذریعے تاجر صارفین کو گھر تک اشیا کی فراہمی کے دوران ڈیبٹ اور کریڈٹ کارڈ کی سہولت کو کارآمد بناتے ہوئے رقم وصول کر سکیں گے۔ یہ سہولت رقم کی ادائیگی کے موجودہ اور واحد طریقے کا محفوظ متبادل ثابت ہو گی جہاں اشیا کی ڈیلیوری کے موقع پر صارفین کو نقد رقم ادا کرنی پڑتی تھی لیکن اب وہ ڈیلیوری کے موقع پر کارڈ کی صورت میں ادائیگی کر سکتے ہیں۔اس سے ڈیلیوری کے دوران رقم سنبھالنے کی ذمے داری بھی کم ہو جائے گی۔ اس سروس کے تحت ویزا(VISA)، ماسٹر کارڈ اور یونین پے قابل قبول ہوں گے۔mPOS تاجروں کے بیک اینڈ پر موجود سسٹم کے ساتھ ضم کیا جا سکتا ہے جو انہیں فوری فیصلے کرنے کے لیے لین دین کی تفصیلات فراہم کرتا رہے گا۔ حبیب بینک لمیٹیڈ کے پیمنٹ سروس کے سربراہ فائق صادق نے اس پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ حبیب بینک تاجروں کے کاروبار کو انتہائی سنجیدگی سے لیتا ہے، گزشتہ سال POS اور آن لائن کارڈ قبولیت کے سولیوشن (Online card acceptance solution) کو متعارف کرانے کے بعد mPOS ایک نیا اضافہ ہے تاجروں کے کاروبار میں رقوم کی ادائیگی کے طریقہ کار کے سلسلے میں ایک سنگ میل ثابت ہو گا۔ اس سے لوگوں کی جانب سے POS تک رسائی کے بجائے POS لوگوں تک خود رسائی کرے گا۔

اشیا کی ڈیلیوری کے دوران نقد رقم پر انحصار کم سے کم ہونے کے باعث اس طرح کے لین دین میں مزید اضافہ ہو گا جس سے تاجروں اور دکانداروں کو محفوظ طریقے سے اشیا کی فروخت میں مدد ملے گی۔دراز ڈاٹ پی کے(Daraz.pk) کے شریک بانی منیب مائر نے کہا کہ ہم HBL اور Monet کے ساتھ شراکت داری پر بہت پرجوش ہیں اور پاکستان بھر میں رقم کی ادائیگی کے جدید حل کے نئے دور کے آغاز میں مددگار ثابت ہوں گے۔ آن لائن شاپنگ کا مستقبل موبائل ڈیوائسز میں پوشیدہ ہے اور ہم اس پلیٹ فارم کو رقم کی فوری ادائیگی کے استعمال پر انتہائی خوش ہیں۔مونیٹ(Monet) کے چیف ایگزیکٹو آفیسر علی عباس سکندر نے کہا کہ جہاں موبائل رقم کی ادائیگی کی مارکیٹ میں تبدیلی لا رہاہے تو دوسری جانب mPOS رقم کی ادائیگی کے ایکو سسٹم میں تیزی سے ابھر رہا ہے اور مالیاتی ادارے اس سے بھرپور مستفیض ہو رہے ہیں۔ایسا کرنے کے لیے ضرورت اس بات کی تھی کہ موجودہ منافع اور شراکت داری کو برقرار رکھتے ہوئے تاجروں کو مسابقتی تجویز پیش کریں تاکہ وہ مستقبل کے بزنس اور صارفین کی ضروریات پر باآسانی پورا اتر سکیں۔

مزید : کامرس