حکمران دہشتگردی کو اسلام اور دینی مدارس کیساتھ جوڑنے پر مصر ہیں ،سراج الحق

حکمران دہشتگردی کو اسلام اور دینی مدارس کیساتھ جوڑنے پر مصر ہیں ،سراج الحق

پشاور(اے این این)امیر جماعت اسلامی پاکستان سراج الحق نے کہا ہے کہ حکومت نے سانحہ بلدیہ ٹاؤن کی جے آئی ٹی رپورٹ پرکان نہ دھرے تو عوام یہ سمجھنے میں حق بجانب ہوں گے کہ حکمران دہشت گردی کو اسلام اور دینی مدارس کے ساتھ جوڑنے پر مصر ہیں،260انسانوں کو زندہ جلانے سے بڑھ کر دہشت گردی کا کوئی واقعہ نہیں ہوسکتا۔سانحہ پشاور کے بعد پوری قوم نے حکومت کو دہشت گردی کے خاتمہ کا مینڈیڈیٹ دیا تھا ۔سانحہ بلدیہ ٹاؤن حکمرانوں کیلئے ایک ٹیسٹ کیس بن چکا ہے ۔سندھ حکومت اور پیپلز پارٹی بھی اپنی ذمہ داریاں پوری کرنے کے بجائے واقعہ کی ذمہ دار لسانی تنظیم کو شیلٹر فراہم کررہی ہے ،ریاست کی ذمہ داری ہے کہ اپنے شہریوں کو جان و مال کا تحفظ فراہم کرے ۔ صدیوں سے چلنے والے مدارس پر ایسے الزامات برطانوی دور میں بھی نہیں لگے جو موجودہ حکمران لگا رہے ہیں ۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے پشاورمیں مختلف وفود سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔سراج الحق نے کہا کہ پشاور سانحہ کے بعد دہشت گردی کے خلاف قوم میں پیدا ہونے والی یکجہتی اور اتحاد کو حکمران اپنی غیر سنجیدگی اور اقتدار کی مصلحتوں کی بھینٹ چڑھا رہے ہیں ۔انہوں نے کہا کہ اگر حکومت نے جے آئی ٹی کی رپورٹ کو سیاست کی نذر کیا تو ملک سے دہشت گردی کے خاتمہ کے تمام دعوے دھرے کے دھرے رہ جائیں گے ۔

مزید : صفحہ اول