14پرائیویٹ اور6سرکاری میڈیکل کالجوں کو نوٹس جاری

14پرائیویٹ اور6سرکاری میڈیکل کالجوں کو نوٹس جاری

لاہور(نامہ نگارخصوصی)سپریم کورٹ نے پاکستان میڈیکل اینڈ ڈینٹل کونسل کے قواعد وضوابط پر عملدرآمد کی جانچ پڑتال کے لئے لاہور کے 14پرائیویٹ اور 6 سرکاری میڈیکل کالجوں کو نوٹس جاری کر دیئے۔مسٹر جسٹس میاں ثاقب نثار کی سربراہی میں قائم تین رکنی بنچ نے شعبہ صحت کی ناقص صورتحال پر از خود نوٹس کیس کی سماعت کے دوران یہ نوٹس جاری کرتے ہوئے قرار دیا ہے کہ اچھی تعلیم حاصل کرنے والے ڈاکٹروں سے ہی پاکستان کا شعبہ صحت بہتری کی طرف جا سکتا ہے۔ پی ایم ڈی سی کے وکیل چودھری عتیق کی طرف سے بنچ کو بتایا گیا کہ جوڈیشل کمیشن کی دو انکوائری رپورٹس میں قواعد وضوابط پر پورا نہ اترنے والے میڈیکل کالجز کا الحاق منسوخ کرنے کی سفارش کی گئی مگر عملی طور پر ایسا ممکن نہ ہو سکاکیونکہ میڈیکل کالجز نے الحاق منسوخی کی کارروائی کے خلاف متعلقہ ہائیکورٹس سے حکم امتناعی حاصل کر رکھے ہیں۔ جس پر فاضل بنچ نے قرار دیا کہ اب ایسا نہیں ہونے دیں گے ، سپریم کورٹ کواختیار حاصل ہے کہ وہ تمام ہائیکورٹس اور سول عدالتوں میں میڈیکل کالجزکے مقدمات کو خود سن سکے ، ڈاکٹر شعبہ صحت کا بنیادی اور مرکزی عنصر ہیں، اگریہی بہتر تعلیم حاصل نہیں کریں گے تو شعبہ صحت بہتر نہیں ہوگا، پی ایم ڈی سی سمیت دیگر متعلقہ ادارے شکایات کررہے ہیں کہ پرائیویٹ میڈیکل کالجز میں معیاری تعلیم فراہم نہیں کر رہے، اچھی تعلیم حاصل کرنے والے ڈاکٹروں کی وجہ سے ہی پاکستان کا شعبہ صحت بہتری کی طرف جا سکتا ہے، عدالت عدالت نے پی ایم ڈی سی کے قواعد وضوابط پر عملدرآمد کی جانچ پڑتال کیلئے لاہور کے 14پرائیویٹ اور 6 سرکاری میڈیکل کالجوں کو نوٹس جاری کر دیئے، جن پرائیویٹ میڈیکل کالجوں کو نوٹس جاری کئے گئے ہیں ان میں فاطمہ میموریل کالج، لاہور میڈیکل کالج، یونیورسٹی آف میڈیسن، سی ایم ایچ ہسپتال، شریف میڈیکل کالج، کانٹیننٹل میڈیکل کالج، اختر سعید میڈیکل کالج، سنٹرل پارک میڈیکل کالج، شالیمار میڈیکل کالج، ایوی سینا میڈیکل کالج، راشد لطیف میڈیکل کالج، آمنہ عنایت میڈیکل کالج، عذرا ناہید میڈیکل کالج اور پاک ریڈ کریسنٹ میڈیکل کالج شامل ہیں، سپریم کورٹ نے جن سرکاری میڈیکل کالجز کو نوٹس جاری کئے گئے ہیں ان میں کنگ ایڈورڈ میڈیکل کالج، فاطمہ جناح میڈیکل کالج، علامہ اقبال میڈیکل کالج ، سروسز انسٹی ٹیوٹ، شیخ زید میڈیکل کالج اور امیرالدین میڈیکل کالج جنرل ہسپتال شامل ہیں، عدالت نے تمام کالجز کو جواب داخل کرانے کی ہدایت کرتے ہوئے مزید سماعت اپریل کے تیسرے ہفتے تک ملتوی کر دی ۔

مزید : صفحہ آخر