وازیراعظم کا سائبر کرائم کی وارداتیں کرنیوالے گروہوں کو گرفتار کرنیکا حکم

وازیراعظم کا سائبر کرائم کی وارداتیں کرنیوالے گروہوں کو گرفتار کرنیکا حکم

لاہور ( زاہد علی خان) وزیراعظم نواز شریف نے ایسے 4گروہوں کو گرفتار کرنے کا حکم دیا ہے جو ایف آئی اے اور پی ٹی اے سے مل کرسائبر کرائم کی وارداتیں کر کے ایس ایم ایس کے ذریعے لوگوں کو لوٹنے والوں کے خلاف کارروائی کا حکم دے دیا ہے۔ یہ گروہ شہریوں کو انعام کا لالچ دے کر لوٹ رہے ہیں۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ وفاقی دارالحکومت چاروں صوبوں میں یہ گروہ اب تک 11 ہزار سے زائد افراد کو لوٹ چکا ہے۔ ایک رپورٹ کے مطابق گروہ کے ارکان دو کروڑ تیس لاکھ سے زائد روپے کا سرکاری خزانے کو نقصان پہنچا چکے ہیں۔ اس پر ایف آئی اے کے متعلقہ افسران نے کوئی کارروائی نہیں کی۔ چند ماہ قبل اس گروہ کے 6 افراد کو دھوکہ دہی کے الزام میں ایف آئی اے نے گرفتار کیا تاہم وہ اپنے اثرو رسوخ سے رہا ہو گئے۔ ذرائع کے مطابق سابق وزیر اعظم شہید بے نظیر بھٹو کے دور کے حکومت میں اس وقت کی وفاقی حکومت نے غریبوں، نادراروں، بیواؤں اور کم آمدنی والے والے بے نظیر انکم سپورٹ پروگرام کے نام سے لوگوں کے لئے فنڈز جاری کئے اور انہیں کارڈ بھی بنا کردئیے مگر بعض اکثر اوقات یہ گروہ ایسے لوگوں کو بھی ایس ایم ایس کر کے ان کو دعوت دیتا ہے کہ آپ کے 25 یا 30 ہزار روپے آپ کے نام آئے ہیں، آپ فلاں جگہ سے آ کر وصول کر لیں ، اس کے لئے ایک باقاعدہ ٹیلی فون نمبر بھی دیا جاتا ہے مگر اس ٹیلی فون پر اول تو کال نہیں ہوتی ، اگر کال ہو بھی جائے تو اس میں متعلقہ شخص کا بات کرنے کے بجائے ایک ریکارڈنگ چلا دی جاتی ہے۔ اس میں ترغیب دی جاتی ہے کہ آپ ہمارے نمبر پر اتنی رقم بھجوائیں اور ایک فارم پُر کریں ، اس کے بعد یہ لوگ غائب ہو جاتے ہیں۔ جس کے بعد مختلف ہیلوں بہانوں سے متعلقہ شخص سے ہزاروں روپے ہتھیا لئے جاتے ہیں، وزیراعظم کے علم میں یہ بھی لائی گئی ہے کہ اس گروہ میں مختلف وفاقی سرکاری محکموں کے افسران اور ماتحت اہلکار بھی شامل ہیں جو اس دھوکہ دہی کی وارداتوں اس خطرناک گروہ کی مدد کرتے ہیں۔ ذرائع نے بتایا ہے کہ اس گروہ میں ایف آئی اے کے سائبر کرائم ، پولیس اور دیگر محکموں کے افسران مل جل کر یہ وارداتیں کرتے ہیں اور اس طرح انعامی رقم حاصل کرنے کے لالچ میں 11 ہزار سے زائد افراد لٹ چکے ہیں، جنہوں نے اب تک کارروائی کے لئے متعلقہ تھانوں اور ایف آئی اے سے رجوع بھی کیا مگر اب تک اس گروہ کے خلاف کوئی کارروائی نہ ہو سکی ہے۔ وزیراعظم نے وزیرداخلہ کو ہدایت کی ہے کہ اس گروہ کو گرفتار کیا جائے اور ان افسران کے خلاف بھی کارروائی کی جائے تو اب تک سرکاری خزانے کو کروڑوں روپے کا نقصان پہنچانے کے علاوہ غریب عوام کو لوٹ رہے ہیں۔

سائبر کرائم

مزید : صفحہ آخر