سینیٹ انتخابات ، الیکشن کمیشن خیرد و فروخت نہ روک سکا تو چیف جسٹس نوٹس لیں : سراج الحق

سینیٹ انتخابات ، الیکشن کمیشن خیرد و فروخت نہ روک سکا تو چیف جسٹس نوٹس لیں : ...

اسلام آباد(صباح نیوز)امیر جماعت اسلامی سراج الحق نے مطالبہ کرتے ہوئے کہاہے کہ الیکشن کمیشن سینٹ انتخابات میں ارکان کی خرید وفروخت کو روکنے میں ناکام رہتا ہے تو چیف جسٹس کو اس معاملے کا از خود نوٹس لینا چاہیے چیف جسٹس ثاقب نثار تاریخ میں امر ہو سکتے ہیں۔ جن سیاسی جماعتوں نے اپنے ارکان کی تعداد سے زیادہ امیدوار کھڑے کیے ہیں وہ ارکان کی خرید وفروخت کے ذریعے زیادہ نشستیں حاصل کرنا چاہتی ہیں۔ ارکان سینٹ کا دولت کے بل بوتے پر انتخاب سینٹ کی موت کے مترادف ہوگا۔سینٹ اجلاس کے بعد پارلیمنٹ کے باہر میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ پیسے کے ذریعے سینٹ میں ’’جھرلو انتخاب‘‘ کے ذریعے بننے والے ارکان سینٹ قطعاً غریب عوام کے لیے قانون سازی نہیں کریں گے۔ یہ ارکان سینٹ اپنے کاروبار،ٹھیکوں، لائسنس، پروٹوکول اور دیگر مالیاتی مفادات کے تحفظ کے لیے سرگرم رہیں گے۔ اگر دولت کی بنیاد پر سینٹ انتخابات میں ’’جھرلو‘‘ چلتا ہے تو اس سے الیکشن کمیشن پر یہ بھی عدم اعتماد ہو سکتا ہے کہ وہ عام انتخابات 2018ء بھی شفاف بنیاد پر منعقد کرانے کا اہل ثابت نہیں ہوگا۔ انتخابات میں پیسے کے استعمال کا کھیل قبل از انتخابات دھاندلی ہے۔ ا گر ایسی سیاست ہو گی تو عوامی اعتماد کو ٹھیس پہنچے گا۔ سینٹ انتخابات میں دولت کے استعمال کو ساری جماعتوں کو ملکر روکنا ہے کھلے طریقے سے سینٹ انتخابات ہونے چاہئیں جمہوریت میں ووٹ کی رازداری کس بات کی۔انتخابی عمل میں رازداری نہیں بلکہ شفافیت کو برقرار رکھنا ہوتا ہے اگر وزیراعظم اور وزیر اعلیٰ کا انتخاب کھلے طریقے سے ہو سکتا ہے تو سینٹ انتخابات میں کیا قباحت ہے۔ دولت کے استعمال کے ذریعے سینٹ کو کمزور نہ کریں اسے لاغر نہ بنائیں دولت کااستعمال تو سینٹ کے لیے موت ہو گی خدارا ایوان بالا پر رحم کریں۔ سیاسی جماعتیں خود اسے کمزور نہ کریں۔سرمایہ داروں اور سیٹھوں کی جھرلو سیاست ختم ہونی چاہیے الیکشن کمیشن کو پیسے کے استعمال کے راستے بند کرنے چاہیں اور اگر وہ ناکام رہتا ہے تو سپریم کورٹ کو سینٹ انتخابات میں دولت کے استعمال کا از خود نوٹس لینا چاہیے۔ چیف جسٹس ثاقب نثار تاریخ میں اپنا نام لکھوا سکتے ہیںْ کرپشن سے پاک انتخابات سے کے حوالے سے ان کا سنہرے الفاظ میں نام یاد رکھا جائے گا۔ ہم پینے کے پانی،ہسپتالوں ،جعلی پولیس مقابلوں کے حوالے سے سپریم کورٹ کے از خود نوٹسز کا خیر مقدم کرتے ہیں۔

سراج الحق

مزید : علاقائی