ایئر پورٹ کسٹم حکام سمیت کوئی اپنے کام سے مخلص نہیں : چیف جسٹس

ایئر پورٹ کسٹم حکام سمیت کوئی اپنے کام سے مخلص نہیں : چیف جسٹس

اسلام آباد(صباح نیوز)سپریم کورٹ نے ایئرپورٹس پر مسافروں کی مشکلات سے متعلق از خود نوٹس کیس کی سماعت گزشتہ روز تک ملتوی کرتے ہوئے ڈی جی سول ایوی ایشن،ایم ڈی اوور سیز پاکستانیز کو کراچی رجسٹری میں طلب کرلیاہے۔چیف جسٹس میاں ثاقب نثار کی سربراہی میں عدالت عظمی کے تین رکنی بینچ نے مقدمہ کی سماعت کی تو ڈپٹی ڈائریکٹر سول ایوی ایشن(سی اے اے)نے بتایاکہ مسافروں کے سامان کے مسائل سول ایوی ایشن دیکھتی ہے۔چیف جسٹس نے خبردار کیا کہ ہمیں مسافروں کی طرف سے شکایات نہیں آنی چا ئیں، جہاز کے ساتھ سیڑھی لگنے میں دو گھنٹے لگ جاتے ہیں اور مسافروں کا سامان تاخیر سے آتا ہے کسٹم حکام سمیت کوئی اپنے کام سے مخلص نہیں ہے ایئرپورٹس پر رنگ برنگے کاؤنٹر کھول دیئے گئے۔ کبھی مسافروں کا سامان ٹو ٹا پھوٹا آتا ہے۔ جسٹس اعجاز الاحسن نے استفسار کیاکہ سول ایوی ایشن ریگولیٹر ہے وہ کیا کررہا ہے۔ سول ایوی ایشن کی کوئی کارکرگی نہیں۔ چیف جسٹس نے کہاکہ ملک کا اچھا برا تاثر ایئرپورٹ سے ملتا ہے۔ جسٹس عمر عطا بندیا ل نے کہاکہ نیویارک ایئرپورٹ کا تاثر اچھا نہیں تو لوگ کیلیفورنیا اترنا پسند کرتے ہیں سنگاپور ایئرپورٹ پر پارک بن رہے ہیں۔ اس دوران ڈپٹی ڈائریکٹر سول ایوی ایشن ماریہ جبین نے بتایا کہ مسافروں کی شکایات کیلئے نمبر دیا گیا ہے اورمسافروں کی شکایات کی آن لائن داد رسی ہوتی ہے۔ عدالت نے حکام سے مطمئن نہ ہوتے ہوئے آئندہ سماعت پر ڈی جی سول ایو ایشن ،ایم ڈی اوور سیز پاکستانیز کوہفتہ کے روز کراچی رجسٹری میں طلب کرلیا۔

چیف جسٹس

مزید : صفحہ آخر