نیب کا نواز شریف دور میں داخل دفتر ہونے والے ، کیس ’’ری اوپن ‘‘ کرنے کا فیصلہ

نیب کا نواز شریف دور میں داخل دفتر ہونے والے ، کیس ’’ری اوپن ‘‘ کرنے کا ...

لاہور(لیاقت کھرل) نیب نے سابق وزیراعظم میاں محمد نواز شریف کے دورِحکومت میں داخل دفتر ہونے والے ڈیڑھ سو سے زائد کیس ’’ری اوپن‘‘ کرنے کا فیصلہ کر لیا۔ نیب ذرائع نے بتایا ہے کہ چیئرمین نیب جسٹس (ر) جاوید اقبال کو ایک رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ سابق وزیر اعظم میاں محمد نواز شریف کے دور حکومت میں اربوں روپے کے میگا فراڈ کے کیسز میں تحقیقات اور انکوائریوں میں نیب قوانین کو پس پردہ رکھا گیا ۔ ذرائع نے بتایا ہے کہ چیئرمین نیب کو پیش کی جانے والی رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ جن سیاستدانوں کے خلاف کیسز اور انکوائریوں کو داخل دفتر کیا گیا ہے۔ان میں ایک سابق وزیر داخلہ8 موجودہ وزراء سمیت متعدد سابق و موجودہ اراکین اسمبلی، سیاستدانوں، بیوروکریٹس اور بینک افسروں کے خلاف کیسز اور انکوائریوں کو اثررسوخ کی بنا پر داخل دفتر کروایا گیا ہے ۔ذرائع کے مطابق ایک سابق وفاقی وزیر داخلہ پنجاب سے تعلق رکھنے والے دو وزراء، اسی طرح کے پی کے سے تعلق رکھنے والے دو وزراء کے نام بھی رپورٹ میں بتائے گئے ہیں۔ نیب ذرائع کے مطابق چیئرمین کے حکم پر ڈی جی نیب لاہور سمیت تمام ریجنل سربراہوں سے اس حوالے سے رپورٹ طلب کر لی گئی ہے۔

مزید : صفحہ آخر