مختلف علاقوں میں بارش اور برفباری، سردی کی شدت میں اضافہ

مختلف علاقوں میں بارش اور برفباری، سردی کی شدت میں اضافہ

اسلام آباد/لاہور /کراچی /پشاور(آئی این پی ) پنجاب اور خیبرپختونخوا سمیت ملک بھر کے مختلف شہروں میں بارش کے بعد سردی کی شدت میں اضافہ ہوگیا ، پہاڑوں پر برفباری کے بعد سیاحوں نے وہاں کا رخ کرلیا،کراچی سمیت سندھ کے مختلف علاقوں میں ٹھنڈی ہوائیں چلنی شروع ہوگئیں،بار ان رحمت برسنے پر لوگوں نے اللہ تعالی کا شکر اداکیا،بارش کے باعث دو ماہ سے زائد عرصہ تک رہنے والی خشک سالی سے مرجھائے چہرے کھل اٹھے۔ تفصیلات کے مطابق وفاقی دارالحکومت اسلام آباد، لاہور،گوجرانوالہ،میانوالی، بہاول پور سمیت پنجاب کے مختلف شہروں میں کہیں ہلکی اور کہیں تیز بارش ہوئی۔ خیبرپختونخوا کے شہر ایبٹ آباد، مانسہرہ ، چارسدہ، بنوں، سوات اور دیربالا میں بھی کہیں ہلکی اور کہیں تیز بارش ہوئی جس کے بعد سردی کی شدت میں مزید اضافہ ہوگیا۔ سردی کا اثر سندھ کی ساحلی علاقوں پر بھی پڑا ہے جس کی وجہ سے کراچی سمیت سندھ کے مختلف علاقوں میں ٹھنڈی ہوائیں چلنی شروع ہوگئی ہیں۔ پنجاب کے شہر حافظ آباد اور گردونواح میں گرج چمک کے ساتھ موسلادھار بارش کی وجہ سے سردی کی شدت میں اضافہ ہو گیا، ننکانہ صاحب ،نارنگ منڈی اور گردونواح میں گرج چمک، تیز ہواں کے ساتھ بارش کا سلسلہ جاری ہے۔ سیالکوٹ شہر اور گردونواح میں بھی موسلادھار بارش سے سردی کی شدت میں اضافہ ہوگیا۔، میانوالی کے اکثرمقامات پربوندابادی سے موسم انتہائی سرد ہوگیا۔ کامونکے اور گردونواح میں رات بھر سے وقفہ وقفہ سے جاری گرج چمک کے ساتھ ہونے والی بارش سے موسم مزید سرد ہوگیا جب کہ بارش کے ساتھ چلنے والی یخ بستہ ہواں سے سردی کی شدت میں اضافہ ہوگیا۔ کندیاں چشمہ پپلاں اور گردونواح میں مسلسل 8 گھنٹوں سے جاری بارش کے باعث گندم اور چنے کی مرجھاتی فصلوں کو بہت زیادہ فائدہ پہنچا ہے، کسانوں نے بارش کو ابر رحمت قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ اس بارش کے باعث ان کی مرجھاتی ہوئی فصلیں ایک بار پھر لہلہانے لگی ہیں۔خیبر پختونخوا میں بنوں اور گردونواح میں موسم سرما کی پہلی بارش سے سردی کی شدت میں اضافہ ہوگیا، بارش کے باعث دو ماہ سے زائد عرصہ تک رہنے والی خشک سالی سے مرجھائے چہرے کھل اٹھے، کسانوں کا کہناہے کہ گندم کی فصل کیلئے بارشوں کی سخت ضرورت تھی، بارشیں نہ ہونے کی وجہ سے بارانی علاقوں میں گندم کی فصل بری طرح متاثرہورہی تھی، بار ان رحمت برسنے پر لوگوں نے اللہ تعالی کا شکر اداکیا۔پشاورمیں بھی 2 ماہ بعد رات سے بارش کا سلسلہ وقفے وقفے سے جاری بارش سے شہر میں جل تھل ہوگیا اور سردی بھی بڑھ گئی، بارش کے باعث پشاور کی سڑکیں کیچڑ سے بھر گئیں تاہم فضاں میں معلق گرد صاف ہوگئی اور طویل خشکی کا خاتمہ ہوگیا۔ شمالی وزیرستان میں بھی بارش اور برفباری سے سردی کی شدت میں اضافہ ہوگیا ، ایجنسی کے پہاڑی علاقہ شوال ، بیرمل ، لواڑ منڈی،اور رزمک میں پہاڑوں نے برف کی سفید چادر اوڑھ لی ، سوات کے علاقے مینگورہ، کالام ، ماہو ڈھنڈ ،مال، جبہ، دیر لوئر میں بارش اور پہاڑوں پر برفباری کا سلسلہ جاری ہے۔محکمہ موسمیات کے مطابق گزشتہ 24 گھنٹے کے دوران سب سے زیادہ بارش دیر 22، کالام 13، پاراچنار 12، میرکھانی 07، دیر زیریں 05، مالم جبہ 04، چترال 03، دروش 01، بلوچستان میں خضدار 11، قلات 08، کوئٹہ03 ، ژوب 01، پنجاب میں بہاولپور 04 اور کوٹ ادو میں 02 ملی میٹر بارش ریکارڈ کی گئی۔ جبکہ کالام 06، زیارت03، مالم جبہ 02 اور دیر میں 01 انچ برفباری ریکارڈ کی گئی۔ آئندہ 24 گھنٹے کے دوران راولپنڈی، گوجرانوالہ، مالاکنڈ، ہزارہ، پشاور، مردان ڈویژن، بالائی فاٹا، اسلام آباد، کشمیر اور گلگت بلتستان میں چند مقامات پر گرج چمک کے ساتھ مزید بارش اور پہاڑوں پر برفباری کا امکان ہے۔ ملک کے دیگر علاقوں میں موسم سرد اور خشک رہے گا۔

بارش اور برفباری

مزید : صفحہ آخر