اٹارنی جنرل کا عدم پیشی پر 10ہزار روپے ، جرمانہ ، ایڈیشنل اٹارنی جنرل کی استدعا پر حکم واپس

اٹارنی جنرل کا عدم پیشی پر 10ہزار روپے ، جرمانہ ، ایڈیشنل اٹارنی جنرل کی ...

اسلام آباد(صباح نیوز)چیف جسٹس میاں ثاقب نثار نے نااہلی مدت کیس میں اٹارنی جنرل اشتر اوصاف کو عدم پیشی پر 10ہزار روپے جرمانہ کر دیا، تاہم ایڈیشنل اٹارنی جنرل کی استدعا پر حکم واپس لے لیا۔سوموار کو 62ون ایف نااہلی کیس کی سماعت چیف جسٹس کی سربراہی میں 5 رکنی بینچ نے کی تو آرٹیکل 62 ون ایف کی تشریح سے متعلق کیس کی سپریم کورٹ میں سماعت کے دوران چیف جسٹس آف پاکستان نے استفسار کیا کہ اٹارنی جنرل کہاں ہیں ؟، اس پر ایڈیشنل اٹارنی جنرل رانا وقار نے کہا کہ عاصمہ جہانگیرکی وفات کے باعث اٹارنی جنرل لاہورمیں ہیں،چیف جسٹس پاکستان نے کہا کہ عاصمہ جہانگیرکے انتقال پرججزسمیت سب دکھی ہیں،دنیاکے کام چلتے رہتے ہیں، سپریم کورٹ نے عدم پیشی پراٹارنی جنرل کو 10 ہزارروپے جرمانہ کردیا۔دوران سماعت ایڈیشنل اٹارنی جنرل نے کہا کہ اٹارنی جنرل منگل کو لندن روانہ ہوں گے تاہم اٹارنی جنرل اپناتحریری جواب داخل کریں گے،اس پر چیف جسٹس ثاقب نثار نے کہا کہ کیااٹارنی جنرل سیرکرنے جارہے ہیں؟،اتنااہم کیس لگاہے اوروہ نہیں آئے۔اٹارنی جنرل لاہور کیوں ہیں؟عدالت نے معاونت کانوٹس دے رکھاہے، اٹارنی جنرل کو خصوصی رعائت نہیں مل سکتی جسٹس عمرعطابندیال نے کہاکہ عدالت نے اٹارنی جنرل سے سوالات بھی کرنے ہوتے ہیں چیف جسٹس نے عدم پیشی پراٹارنی جنرل کو10ہزار روپے جرمانہ کرتے ہوئے کہاکہ جرمانے کی رقم فاطمید فاؤنڈیشن میں جمع کروائیں ۔ انہوں نے استفسار کیا کہ کیس کی سماعت کب تک ملتوی کریں ۔تو ایڈیشنل اٹارنی جنرل کا کہنا تھا کہ اٹارنی جنرل نے عالمی ثالثی کے معاملات میں پیش ہوناہے ۔ چیف جسٹس نے کہاکہ اٹارنی جنرل کسی مقدمے کے لیے نہیں جارہے ملک کے اٹارنی جنرل کایہ رویہ ہے انہوں نے ہدایت کی کہ اٹارنی جنرل سے کہیں 4بجے لاہور سے آجائیں دریں اثنا عدالت نے ایڈیشنل اٹارنی جنرل راناوقار کی استدعاپر جرمانے کاحکم واپس لیتے ہوئے کیس کی سماعت ملتوی کردی ۔

نااہلی مدت کیس

مزید : صفحہ اول