کوہاٹ ،فائر بریگیڈئیر اور شاول سالوں سے خراب

کوہاٹ ،فائر بریگیڈئیر اور شاول سالوں سے خراب

کوہاٹ(بیورورپورٹ) ٹی ایم اے کی خراب فائر بریگیڈ اور شاول سالوں گزرنے کے بعد بھی مرمت سے محروم‘ انصاف کی حکومت میں ٹی ایم اے مشینری کو انصاف نہ مل سکا گزشتہ کئی سالون سے پرائی ورکشاپس میں پڑی مشینری دلبرداشتہ ہو گئی تفصیلات کے مطابق حلقہ 38 سے منتخب ایم پی اے اور ضلعی ترقیاتی کمیٹی کے سربراہ ضیاء اللہ بنگش نے مالی سال 2013-14 میں ٹی ایم اے کوھاٹ کی کھٹارہ اور ناکارہ گاڑیوں کی مرمت کے لیے 17 لاکھ روپے رائلٹی فنڈ سے ادا کیے تھے مگر افسوس چار سال سے زائد عرصہ گزرنے کے باوجود نہ تو فائر بریگیڈ گاڑی کی حالت دیکھنے کے لیے کوئی جا سکا اور نہ خراب شاول کو ٹھیک کروایا جا سکا جو کہ لمحہ فکریہ ہے اس حوالے سے متعدد بار اینٹی کرپشن اور ضلعی انتظامیہ کے افسران سے بھی درخواستیں کی گئیں اور ٹی ایم اے افسران اور ایم پی اے ضیاء اللہ بنگش تک شاول اور فائر بریگیڈ گاڑیوں کی آہیں اور سسکیاں پہنچائی گئیں مگر کسی کا دل ان آہوں سے نہ پگھل سکا اور تاحال فائر بریگیڈ گاڑی گزشتہ چار سالوں سے پشاور کی کسی نامعلوم ورکشاپ میں کھڑی انتظار کر رہی ہے جبکہ گزشتہ 30 مہینوں سے ٹی ایم اے کا شاول جو آدھے سے زیادہ بنوں روڈ پر ایک مستری کے پاس کھلے آسمان تلے بے یارو مدد گار پڑا ہے اور ایک حصہ پرزوں کی صورت میں ٹی ایم اے میں پڑا بے وفائی پر روتا دکھائی دے رہا ہے عوامی حلقوں نے تحصیل ناظم ملک تیمور‘ ڈپٹی کمشنر خالد الیاس اور خصوصاً اینٹی کرپشن حکام سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ نوٹس لیں۔

مزید : پشاورصفحہ آخر