راولپنڈی،پلازوں کی غیر قانونی تعمیر،9مارکان،3ٹی ایم اے فسران 8انسپکٹرز کیخلاف کارروائی کا حکم

راولپنڈی،پلازوں کی غیر قانونی تعمیر،9مارکان،3ٹی ایم اے فسران 8انسپکٹرز ...

راولپنڈی (جنرل رپورٹر)محکمہ انسداد رشوت ستانی راولپنڈی نے راولپنڈی مری روڈ پر کمرشل پلازوں کی تعمیر میں مجرمانہ غفلت برتنے پر ٹی ایم اے راول ٹاون کے تین افسران، آٹھ انسپکٹرزسمیت نو پلازہ مالکان کے خلاف قانونی کاروائی کا حکم جاری کر دیاہے ۔ ملزمان کے خلاف تھانہ انٹی کرپشن راولپنڈی میں مقدمہ درج کرکے کاروائی شروع کر دی گئی ہے۔ڈائریکٹر انٹی کرپشن راولپنڈی عارف رحیم کے مطابق محکمہ انسداد رشوت ستانی کی طرف سے مری روڈ راولپنڈی پر غیر قانونی کمرشل پلازوں کی تعمیر کے خلاف سرکل آفیسر ہیڈ کوارٹر امجد شہزاد کی سربراہی میں تحقیقات کی گئیں جن میں ملزمان کے خلاف قانونی کاروائی کی منظوری دی گئی اور انکوائری رپورٹ کے مطابق ٹی ایم اے راول ٹاون کے ٹاون افسران ریگولیشنز ملک توصیف احمد ، ملک مختار احمد ، شہزاد نوید گوہر ، ارشد خان بلڈنگ انسپکٹر ، غلام مصطفے شاہ انفورسمنٹ انسپکٹرز، حاجی مختار احمد ،طارق یوسف،محمد سہیل، محمد سلیم خان، گل رحمن کے خلاف تھانہ اینٹی کرپشن راولپنڈی میں ایف آئی آر درج کر لی گئی ہے۔ راولپنڈی میونسپل کارپوریشن اور عملے سے ساز باز کرکے غیر قانونی تعمیرات کرنے والے جن پلازہ مالکان کے خلاف کاروائی کی گئی ان میں عزیز اللہ مالک چائینہ سینٹر، ڈاکٹر محمد رفیق اور آدم خان گل رحمن مالک گلف سینٹر، عبدالمجید ملک آشیانہ سینٹر، دبئی پلازہ کے مالکان ،ملک سعد اللہ خان، نعیم اللہ خان، عامر اللہ خان اور فہیم اللہ خان شامل ہیں ۔ تفصیلات کے مطابق راولپنڈی مری روڈ پرغیر قانونی طور پر تعمیر کئے گئے متعد دپلازے لوگوں سے پیسے وصول کرکے کسی باضابطہ سائٹ پلان کی منظوری کے بغیر دھوکہ دہی سے مالکانہ حقوق پر فروخت کئے گئے اور قوانین کی خلاف ورزی پر ڈائریکٹر انٹی کرپشن راولپنڈی عارف رحیم کے احکامات پر ملزمان کے خلاف تھانہ اینٹی کرپشن میں مقدمہ درج کرنے کے بعد اسسٹنٹ ڈائریکٹر ضیاء اللہ شاہ اور ڈپٹی ڈائریکٹر ٹیکنیکل اور سرکل آفیسر ہیڈ کوارٹر اینٹی کرپشن امجد شہزاد پر مشتمل جے آئی ٹی تشکیل دے گئی ہے۔

مزید : پشاورصفحہ آخر /راولپنڈی صفحہ آخر