گرین لائن بس منصوبہ رواں مالی سال گرومندر تک مکمل ہوجائے گا

گرین لائن بس منصوبہ رواں مالی سال گرومندر تک مکمل ہوجائے گا

کراچی (اسٹاف رپورٹر) سرجانی ٹاؤن سے جامع کلاتھ تک جانے والا گرین لائن بس منصوبہ رواں مالی سال گرومندر تک مکمل ہوجائے گا۔ منصوبے کے نگران صالح فاروقی نے کہا ہے کہ منصوبے میں تاخیر ہوئی لیکن اب اسے بہتر انداز میں مکمل کیا جارہا ہے۔پیر کو سیکرٹری ٹرانسپورٹ سندھ سعید احمد اعوان،منیجر گرین لائن زبیر احمد چنہ کے ہمراہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے گرین لائن منصوبے کے نگران صالح فاروقی نے آئندہ تین ماہ میں گرومندر تک انفرا اسٹرکچر مکمل ہوجائے گا اور اسے عوام کی سہولت کے لیے کھول دیا جائے گا جبکہ منصوبے کا اگلا حصہ یعنی گرو مندر سے جامع کلاتھ تک کا ٹریک آئندہ مالی سال میں مکمل ہوگا۔انہوں نے کہا کہ یہ منصوبہ ابتدائی طور پر صرف گرومندر تک تھا تبدیلیوں کی وجہ سے تاخیر ہوئی تاہم اب یہ بہتر انداز میں تکمیل کی جانب گامزن ہے۔ صالح فاروقی نے کہا کہ نمائش پر آدھا کلومیٹر طویل انڈر گراونڈ اسٹاپ بنایا جارہا ہے جہاں مستقبل میں بننے والی تمام لائنز کی بسوں کے لیے جگہ ہوگی۔صالح فاروقی نے کہا کہ یہ کراچی کے عوام سے کیا گیا وعدہ جو اب تکمیل کی جانب گامزن ہے۔ نمائش کے آگے تعمیر کے لیے نیا کنٹریکٹ دیا جائے گا اور آئندہ مالی سال کے اختتام تک یہ منصوبہ جامع کلاتھ تک مکمل ہوچکا ہوگا۔اس موقع پر سیکرٹری ٹرانسپورٹ سندھ سعید اعوان نے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ اور نج لائن منصوبہ شرو ع ہوتے ہی ٹھیکیدار کا انتقال ہوگیا جس کے سبب منصوبے میں مشکلا ت پیدا ہوئیں۔ رواں مالی سال میں 80 بسیں سرجانی سے گرومندر تک چلنا شروع ہوجائیں گی۔یاد رہے کہ فروری 2016 میں سابق نا اہل وزیر اعظم نوا ز شریف نے کراچی میں منصوبے کا سنگِ بنیاد رکھتے ہوئے کہا تھا کہ یہ منصوبہ ایک سال کے عرصے میں مکمل کیا جائے گا تاہم اب دو سال مکمل ہوجانے کے باوجو د یہ منصوبہ تاحال مکمل نہیں کیا جاسکا ہے۔ابتدائی طور پر اس کی لاگت 16 ارب روپے بتائی گئی تھی تاہم بعد میں اسے بڑھا کر 24 ارب روپے کردیا گیا۔

Ba

مزید : پشاورصفحہ آخر /راولپنڈی صفحہ آخر

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...