نیب ملتان پنجاب کانسٹیبلری سکینڈل کے مرکزی کرداروں پرمہربان ، مکمل پروٹوکول

نیب ملتان پنجاب کانسٹیبلری سکینڈل کے مرکزی کرداروں پرمہربان ، مکمل پروٹوکول

ملتان(نمائندہ خصوصی)نیب ملتان بیورو نے پنجاب کا نسٹیبلری ملتا ن کے سکینڈل میں مرکزی کرداروں سے انکوائری میں رہنمائی لینا شروع کررکھی ہے نیب کی جانب سے انکوائری (بقیہ نمبر43صفحہ7پر )

شروع ہونے کے بعد ڈسٹرکٹ اکاؤنٹس آف ملتان کے آڈیٹر محمد کاشف نے بھی اپنا یبان ریکارڈ کراناشروع کردیاہے معلوم ہوا ہے انٹی کرپشن اسٹبلشمنٹ ملتان ریجن پنجاب کانسٹبلری ملتان سیکنڈل کے ملزمان کے خلاف تحقیقات مکمل کرچکی تھی دوران تحقیقات ملزمان کاکردار سامنے آگیا ۔ اسی دوران مرکزی کرداروں میں شامل ڈسٹرکٹ اکاؤنٹس آفسران باسط مقبول ہاشمی ، بشیر احمد ، آڈیٹرز موثردریشک ، طاہر بخاری ودیگر نے عدالتوں کاسہارا لیکرکیس کو الجھاناشروع کریا۔ جس کیوجہ سے انٹی کرپشن کی تفتیش ٹیم مرکزی ملزمان کی گرفتاری میں کامیاب نہ ہوسکی بتایاگیا ہے جب سے سپیشل جج انسداد رشوت ستانی کی خصوصی عدالت نے کیس احتساب عدالت میں ٹرانسفر کرنے کے احکامات جاری کئے ۔ تومرکزی کرداروں نے نیب کے انوسٹی گیشن آفیسر کو تصور کا ایک رخ دکھاناشروع کردیاہے۔ سینئرآڈیٹرز موثر دریشک اورطاہر بخاری انوسٹی گیشن آفیسرز کو یہ سمجھانے کی کوشش کررہے ہیں کہ ڈسٹرکٹ اکاؤنٹس آفس ملتان کاکوئی قصور نہیں ہے بلکہ ایس پیز پنجاب کانسیبلری بطور ڈی ڈی اوز ذمہ دار ہیں ۔ ان دونوں آڈیٹرزکو نیب آفس میں مکمل پروٹوکول مل رہے ۔ جس کیوجہ سے ان ملزمان نے اب سکھ کا سانس لیاہے۔

مزید : پشاورصفحہ آخر /راولپنڈی صفحہ آخر /ملتان صفحہ آخر

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...