”سب کھلاڑیوں کو پتہ ہے کہ یہ کھلاڑی اپنے ابو کی پرچی پر آیا ہے اور اس کی ٹیم نے ۔۔۔“ علی ترین کی شکست پر سینئر صحافی نے ایسی بات کہہ دی کہ آپ بھی دنگ رہ جائیں گے

”سب کھلاڑیوں کو پتہ ہے کہ یہ کھلاڑی اپنے ابو کی پرچی پر آیا ہے اور اس کی ٹیم ...
”سب کھلاڑیوں کو پتہ ہے کہ یہ کھلاڑی اپنے ابو کی پرچی پر آیا ہے اور اس کی ٹیم نے ۔۔۔“ علی ترین کی شکست پر سینئر صحافی نے ایسی بات کہہ دی کہ آپ بھی دنگ رہ جائیں گے

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) سینئر صحافی و اینکر پرسن منصور علی خان کا کہنا ہے کہ علی ترین اپنے ابو کی پرچی پر آئے اور ان کی ٹیم نے امپائر کو بھی ساتھ ملانے کی کوشش کی۔

منصور علی خان نے علی ترین کی شکست پر ٹویٹ کیا ”موروثی سیاست کو ختم کریں گے۔۔۔ لگتا ہے واقعی ختم ہونے والی ہے“۔

اینکر پرسن کے اس ٹویٹ کے جواب میں تحریک انصاف کے ایک کارکن نے کہا ”پہلی بال پر اگر وکٹ گِر جائے تو اسے ٹرائی بال کہتے ہیں۔ علی خان ترین کا یہ پہلا الیکشن تھا جس میں وہ کڑا مقابلہ کرکے ہارا، تو یہ اس کی ٹرائی بال سمجھی جائے۔ انشاءاللہ 2018 کے عام انتخابات میں یہ سیٹ پی ٹی آئی کی ہوگی اور پاکستان کا وزیراعظم سرٹیفائیڈ "صادق و امین" ہوگا“۔

تحریک انصاف کے کارکن کو جواب الجواب دیتے ہوئے منصور علی خان نے کہا کہ ” پہلی بال ہو یا دوسری، گراونڈ میں سب کھلاڑیوں کو پتہ ہے کہ یہ کھلاڑی اپنے ابو کی پرچی پر آیا ہے اور اس ٹیم نے امپائر کو بھی اپنے ساتھ ملانے کی کوشش کی تھی، شکریہ “۔

منصور علی خان کی اس بات پر ٹوئٹر پر تحریک انصاف کے حمایتیوں اور مخالفین میں لفظی جنگ چھڑ گئی۔ خانسا علی نے کہا ” آپ کا بیٹا یا بیٹی بھی اینکر نہ بنے اب، کسی ڈاکٹر کا بچہ ڈاکٹر نہ بنے، اگروہ اپنے والدین کے نقش قدم پر چلیں اور میرٹ پر ان کے مقام تک پہنچیں تو یہ موروثی سیاست اور اینکری بن جائے گی؟۔ علی ترین نے اپنے باپ کے نقش قدم پر چلتے ہوئے گراﺅنڈ پر الیکشن لڑا “۔

منصور علی خان نے اس بات کا جواب دیتے ہوئے کہا کہ ” کیا ایک جاب کرکے پیسے کمانا سیاست کے مترادف ہے؟ خدا کا واسطہ ہے کہ کوئی منطقی مثال پیش کرو، علی ترین اگر اپنے والد کا کاروبار سنبھالتا ہے تو اس کو موسٹ ویلکم ، لیکن اگر وہ سیاست میں آتا ہے تو اپنے باپ کا نام استعمال کرنے کی بجائے ایک عام کارکن کی طرح آغاز کرے“۔

مزید : سیاست /علاقائی /اسلام آباد /پنجاب /لودھراں

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...