گاﺅں میں انتہائی قدیم پہاڑی جسے گاﺅں والے عام پہاڑی ہی سمجھتے رہے، لیکن دراصل یہ کیا چیز ہے؟ حقیقت ایسی کہ کسی نے سوچا بھی نہ تھا، جان کر ہر شخص خوفزدہ ہوگیا کیونکہ۔۔۔

گاﺅں میں انتہائی قدیم پہاڑی جسے گاﺅں والے عام پہاڑی ہی سمجھتے رہے، لیکن ...
گاﺅں میں انتہائی قدیم پہاڑی جسے گاﺅں والے عام پہاڑی ہی سمجھتے رہے، لیکن دراصل یہ کیا چیز ہے؟ حقیقت ایسی کہ کسی نے سوچا بھی نہ تھا، جان کر ہر شخص خوفزدہ ہوگیا کیونکہ۔۔۔

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

نیویارک(نیوز ڈیسک) اہرام کا جب بھی ذکر ہو تو ذہن میں مصر کا تصور ابھرتا ہے لیکن کسے معلوم تھا کہ امریکا میں بھی اہرام پائے جاتے ہیں، بلکہ حیرت کی بات یہ ہے کہ ہزاروں سال قدیم ایک ہرم کے آس پاس آباد لوگ بھی اس کی اصل حقیقت سے بے خبر تھے۔

ڈیلی سٹار کے مطابق ’پیرامڈ ہل‘ نامی یہ ہرم امریکی ریاست شمالی ڈکوٹا کے علاقے فورٹ رینسم میں واقع ہے، لیکن مقامی لوگ آج تک اسے ایک عام پہاڑی ہی سمجھتے رہے۔ مقامی لوک داستانوں میں بتایا جاتا ہے کہ اس علاقے میں ہزاروں سال قبل اہرام کی تعمیر تواﺅ کانیان قبائل نے کی لیکن کسی کو معلوم نہیں تھا کہ پیرامڈ ہل نامی پہاڑی ہی دراصل وہ قدیم ہرم ہے جس کا لوک داستانوں میں ذکر ملتا ہے۔

ماہرین آثار قدیمہ کی ایک حالیہ تحقیق میں یہ دلچسپ انکشاف سامنے آیا ہے کہ یہ پہاڑی ہی دراصل ہزاروں قدیم ہرم ہے، جس کی تعمیر تقریباً 5 ہزار سے 9 ہزار سال قبل کی گئی۔ سائنسدانوں کے لئے سب سے حیران کن چیز وہ پتھر ثابت ہوا ہے جس پر ثبت کی گئی علامات جدید دور کی موسیقائی علامات اور مورس کوڈ جیسی ہیں۔ اس تحریر کا مطلب سمجھنے کی بہت کوششیں کی گئیں لیکن اس میں تاحال کامیابی نہیں ہوئی ہے۔ کچھ ماہرین کا کہنا ہے کہ یہ علامات اہرام کی تعمیر کرنے والوں کے نام ہیں جبکہ کچھ ایسے بھی ہیں جن کے خیال میں یہ ستاروں کے نقشے ہیں۔

مزید : ڈیلی بائیٹس