کشمیریوں کی تحریک آزادی اور عقیدہ ختم نبوت سے غداری کرنے والوں کا احتساب ضروری:کشمیر سیمینار سے مقریرین کا خطاب

کشمیریوں کی تحریک آزادی اور عقیدہ ختم نبوت سے غداری کرنے والوں کا احتساب ...

لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن)مذہبی، سیاسی و کشمیری جماعتوں کے رہنماؤں ، مسیحی اور سکھ برادری کے نمائندوں نے دفاع پاکستان کونسل لاہور کے تحت کشمیر سیمینار سے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ کشمیریوں کی تحریک آزادی اور عقیدہ ختم نبوتﷺ سے غداری کرنے والوں کا احتساب ضروری ہے، سقوط ڈھاکہ کا بدلہ کشمیر میں لیں گے، کشمیر پاکستان کی شہ رگ ہے، حکمران بھارت سے دوستی کی بجائے کشمیریوں کی جدوجہد آزادی کا ساتھ دیں، کشمیریوں کو حق خودارادیت ملنے تک جنوبی ایشیا میں امن قائم نہیں ہو سکتا، مظلوم کشمیریوں سے لاالہ الااللہ کا رشتہ ہے، اہل کشمیر کے دل پاکستان کے ساتھ دھڑکتے ہیں، تمام سیاسی و مذہبی جماعتیں اور اقلیتیں مظلوم کشمیریوں کے ساتھ ہیں،حافظ محمد سعید کشمیریوں کی طرح عیسائی او رہندو برادری کی بھی مدد کر رہے ہیں، اقلیتوں کو پاکستان میں سب سے زیادہ حقوق حاصل ہیں۔

مقامی شادی ہال میں مسئلہ کشمیر کے حوالہ سے ہونے والے سیمینار سے دفاع پاکستان کونسل او رجماعۃالدعوۃ کے مرکزی رہنما مولانا امیر حمزہ، جمشید اقبال چیمہ، حافظ طلحہ سعید، حافظ شفیق الرحمان،شیخ نعیم بادشاہ، ابوالہاشم ربانی، چوہدری احسان الرحمن،مولانا فضل الرحمن ، قاری یوسف احرار، کرامت پادری، سردار آفتاب احمد ورک،سردار گوپال سنگھ چاولہ ، علامہ یونس حسن، مولانا فہیم الحسن تھانوی، پروفیسر عتیق اللہ، سید حسن باری ،حافظ عبید الرحمان ایڈوکیٹ ،محمد علی یزدانی ،مولانا محمد ادریس فاروقی، راجندر سنگھ، محمد فیاض خان، حافظ لطف اللہ ودیگر نے خطاب کیا۔ دفاع پاکستان کونسل کے کشمیر سیمینار سے مسیحی اور سکھ برادری کے رہنماؤں نے خطاب کرتے ہوئے کشمیریوں کیلئے بھرپور جدوجہد آزادی پر حافظ محمد سعید کو خراج تحسین پیش کیا اور کہا کہ وہ اس جدوجہد آزادی میں ا ن کے ساتھ ہیں۔

دفاع پاکستان کونسل کے مرکزی رہنما اور تحریک حرمت رسول ﷺ کے چیئرمین مولانا امیر حمزہ نے کہا کہ سارے دریا مقبوضہ کشمیر سے پاکستان آتے ہیں۔ انڈیا کا سوائے ایک ٹنل کے کشمیر سے کوئی راستہ نہیں ملتا ‘ وہ بھی گورداس پور سے جاتا ہے جس پر بھارت نے زبردستی قبضہ کیا۔بھارت نے اپنی نصف فوج کشمیر میں داخل کر رکھی ہے۔مودی نے بنگلہ دیش جاکر دہشت گردی کا اعتراف کیا اور کہا کہ اس نے پاکستان دولخت کرنے میں کردارادا کیا۔ ہم ان شاء اللہ سقوط ڈھاکہ کا بدلہ لیں گے۔انڈیا خود کو دنیا کی سب سے بڑی جمہوریت قرار دیتا ہے لیکن حقیقت میں یہ دہشت گرد ملک ہے جو کلبھوشن جیسے دہشت گردوں کو پاکستان میں داخل کر رہا ہے۔ انہوں نے کہاکہ کشمیر جغرافیائی لحاظ اور عقیدہ کی بنا پر پاکستان کا حصہ ہے۔ حافظ محمد سعید نے سال 2017کشمیر کے نام کیا تو انہیں نظربند کر دیا گیا۔ حریت رہنماؤں سید علی گیلانی،میر واعظ عمر فاروق،سیدہ آسیہ اندرابی و دیگر نے کہا کہ پاکستان ایک مسجد کی مانند ہے۔کشمیری پاکستان سے پیار کرتے ہیں۔کشمیری شہداء کو پاکستانی پرچم میں لپیٹ کر دفن کیا جاتا ہے۔ اہل کشمیر سے ہمارا رشتہ کلمہ طیبہ کی بنیاد پر ہے۔ مولانا امیر حمزہ نے کہاکہ نظریاتی میدان میں دہشت گردی کیخلاف جماعۃالدعوۃ نے بھرپور کردارادا کیا ہے۔ کشمیر پر اقوام متحدہ کی قراردادوں پر عمل نہیں کیا جاتااور دباؤ پاکستان پر بڑھایا جاتا ہے۔ آج جدوجہد آزادی کشمیر عروج پر ہے۔ کشمیر کی طرح خالصتان کو بھی آزادی ملے گی۔ تحریک آزادی کشمیر میں سکھ بھی شامل ہیں۔ تحریک انصاف پنجاب کے نائب صدر جمشید اقبال چیمہ نے کہاکہ بعض لوگ یہاں بیٹھ کر بھارت کی زبان بول رہے ہیں۔ جو لوگ انڈیا سے یکطرفہ دوستی کی بات کرتے ہیں وہ ہندو بنئے کی ذہنیت نہیں سمجھتے۔ ہمیں کہا جارہا ہے کہ بھارت کی غلامی قبول کر لیں۔ وہ ہمیں امن سے رہنے دے، ہمارے پانیوں پر سے قبضہ چھوڑ دے اور کشمیریوں کو آزادی دے ہم امن سے رہنے کیلئے تیار ہیں۔ آج اپنے خشک دریا دیکھ کررونا آتا ہے۔ حافظ محمد سعید خود کو طاقتور بنانے کی بات کرتے ہیں۔ کشمیریوں کی جدوجہد آزادی میں تحریک انصاف آپ کے ساتھ ہے۔جماعۃ الدعوۃ کے مرکزی رہنما حافظ طلحہ سعید نے کہا کہ بھارت سب سے بڑا دہشت گرد ہے جو پروپیگنڈہ کر کے دنیا کو متاثر کرنے کی کوشش کر رہا ہے افسوس کی بات ہے کہ اسلا م آباد کے حکمران ابہام کا شکار ہیں۔ہمارادشمن پاکستان کو نقصان پہنچانے میں کسی ابہام کا شکار نہیں لیکن جنہوں نے کشمیریوں کا وکیل بننا تھا وہ کنفیوژن کا شکار ہیں۔انہوں نے کہا کہ کشمیری وصیت کرتے ہیں کہ ان کا کفن پاکستان کا پرچم بنایا جائے۔رائے شماری کی بات درست ہے لیکن ساتھ کشمیریوں کی لاکھوں قربانیوں کو بھی دیکھا جائے۔انہوں نے کہاکہ ایک طرف کشمیر کو پاکستان کی شہہ رگ کہیں اور اس شہہ رگ کو چھڑانے کی کوشش کو دہشت گردی قرار دینے کے اشارے دنیا کو دیں؟۔پاکستا ن کا قانون کشمیر کی تحریک کو دہشت گردی قرار نہیں دیتا۔مودی دہشت گردہے جو پاکستان کو نقصان پہنچانے کے نیٹ ورک بنا رہا ہے۔ورلڈ کالمسٹ کلب کے چیئرمین حافظ شفیق الرحمان نے کہا کہ جنوبی ایشیا میں اسوقت تک امن قائم نہیں ہو گا جب تک اقوام متحدہ کی قراردادوں کی روشنی میں کشمیریوں کو حق خود ارادیت نہیں دے دیا جاتا اسوقت تک پاکستان کا وجود بھی ادھورا ہے۔ہم ستر سال سے پاکستان کو بے جان لاشے کے طور پر پھر رہے ہیں۔کشمیر کے حوالے سے کریڈٹ حافظ محمد سعید کو جاتا ہے۔جماعۃ الدعوۃ،فلاح انسانیت فاؤنڈیشن کیخلاف اقدامات بھارت کی خوشنودی کیلئے کئے جارہے ہیں۔ دفاع پاکستان کونسل لاہور کے کو آرڈنیٹر شیخ نعیم بادشاہ نے کہا کہ کشمیر میں اتنا خون بہہ چکا ہے کہ اس تحریک کو روکنا بھارت کے بس میں نہیں۔جماعۃ الدعوۃ لاہور کے مسؤل ابوالہاشم ربانی نے کہا کہ کشمیری ہر روز بھارتی فوج کا ظلم و ستم سہتے ہیں ہمیں ایک دن بات کر کے بیٹھ نہیں جانا چاہئے بلکہ کشمیریوں کی بھر پور مدد وحمایت کرنی چاہئے۔چیئرمین پنجابی سکھ سنگت سردار گوپال سنگھ چاولہ نے کہاکہ انڈیا اسلام اور پاکستان کا بہت بڑادشمن ہے۔ انڈیا میں سکھوں پر آج تک ظلم کیا جارہا ہے۔ غلامی کا پوچھنا ہے تو کشمیریوں اور بھارت میں رہنے والے سکھوں سے پوچھ لیں۔ حافظ محمد سعید ظلم کیخلاف کام کر رہے ہیں۔ انڈیا نے حافظ محمد سعید کی حمایت پر میرے بھارت داخلے پر پابندی لگا رکھی ہے۔مسیحی برادری کے نمائندے کرامت پادری نے کہاکہ حافظ محمد سعید مظلوموں کے ساتھی ہیں۔انہوں نے ہر مشکل وقت میں مسیحی اور ہندو برادری سمیت تمام اقلیتوں کا ساتھ دیا ہے۔مسیحی برادری تحریک آزادی کشمیر کیلئے ان کی کاوشوں کا احترام کرتی ہے اور ہر لحاظ سے ان کے ساتھ ہے۔ پاکستان زندہ باد پارٹی کے بانی چیئرمین سردار آفتاب احمد ورک نے کہاکہ کشمیر کی آزادی اور ہندوستان کا منہ توڑ نے کیلئے اس ملک میں حافظ محمد سعید نے سب سے کلیدی کردارا دا کیا ہے۔پاکستان ملی لیبر فیڈریشن کے جنرل سیکرٹری چوہدری احسان الرحمن نے کہاکہ ہمیں عملی طور پر کشمیریوں کی آزادی کیلئے کام کرنا چاہیے۔ پاکستان بھر کے سرکاری ملازمین کے دل بھی کشمیریوں کے ساتھ دھڑکتے ہیں۔ ہمارا ان کے ساتھ کلمہ کا رشتہ ہے۔مجلس احرار اسلام کے مرکزی رہنما قاری محمد یوسف احرار ، جمہوری وطن پارٹی کے مرکزی ڈپٹی سیکرٹری جنرل میاں راشد، جمعیت علماء اسلام (ف) کے رہنما مولانا فضل الرحمن، جماعت اساتذہ پاکستان کے صدر پروفیسر عتیق اللہ، سید حسن باری ،حافظ عبید الرحمان ایڈوکیٹ ،محمد علی یزدانی ،مولانا محمد ادریس فاروقی، راجندر سنگھ، محمد فیاض خان، حافظ لطف اللہ ودیگر نے کہاکہ کشمیر میں پاکستان سے رشتہ کیا لاالہ الااللہ کے نعرے لگائے جارہے ہیں۔ کشمیر پاکستان کی شہ رگ ہے لیکن افسوس کہ پاکستان کشمیریوں کی آزادی کیلئے مضبوط کردار ادا نہیں کر رہا

مزید : علاقائی /پنجاب /لاہور

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...