پنجاب میں نیا بلدیاتی سسٹم لانے کا اصولی فیصلہ ‘4 ماہ بعد الیکشن کا امکان

پنجاب میں نیا بلدیاتی سسٹم لانے کا اصولی فیصلہ ‘4 ماہ بعد الیکشن کا امکان

جام پور (نامہ نگار )حکومت پنجاب نے موجودہ بلدیاتی نظام ختم کرکے نیا بلدیاتی نظام لانے کا فیصلہ کر لیا۔ذرائع سے معلوم ہوا کہ حکومت پنجاب نے موجودہ نظام کو ختم کرکے نیا بلدیاتی نظام لانے کا فیصلہ کیا۔ قائم مقام بلدیاتی صوبائی وزیر راجہ بشارت نے بھی ایک اجلاس کی صدارت کی جس میں تمام پہلو کا جائزہ لیا گیا۔ ملنے والی معلومات کے مطابق موجودہ نظام میں ترمیم کرکے ضلع چیرمین کا الیکشن(بقیہ نمبر33صفحہ12پر )

براہ راست کرنے کا فیصلہ جبکہ یونین کونسل میں ارکان کی تعداد کم کرکے سات کر دی گئی ہے۔ پنجاب اسمبلی کے آیندہ اجلاس میں بل پیش کیے جانے کا قومی امکان ہے۔ دوسری طرف موجودہ بلدیاتی چیرمینوں نے بھی مدت مکمل نہ کیے جانے پر تشویش کا اظہار کیا ہے۔ اس وقت صوبہ پنجاب کے سولہ چیرمین تحریک انصاف میں شامل ہو چکے ہیں ۔ دس چیرمین مسلم لیگ ن سے وابستگی رکھے ہوئے ہیں۔ راجن پور کے ضلع چیرمین عبدالعزیز خان جگن نے کے تحریک انصاف میں شمولیت کے معاملات مقامی قیادت کی رکاوٹ کی وجہ سے طے نہیں ہو سکے۔ دوسری طرف پنجاب حکومت نے متوقع الیکشن کے لیے محکمہ تعلیم سے سٹاف کی تفصیل طلب کر لی ہے۔لہٰذا جون میں بلدیاتی الیکشن کیے جانے کا قومی امکان ہے۔

مزید : ملتان صفحہ آخر