مہمند ،بھتی ڈاگ مڈل سکول میں طالب علم پر وحشیانہ تشدد ،بازو توڑ دیا

مہمند ،بھتی ڈاگ مڈل سکول میں طالب علم پر وحشیانہ تشدد ،بازو توڑ دیا

مہمند ( نمائندہ پاکستان ) مہمند، بھائی ڈاگ مڈل سکول میں چوتھی جماعت کے طالب علم پر اُستاد کا تشدد۔ تشدد کے دوران طالب علم کا ہاتھ ٹوٹ گیا۔ اعلیٰ حکام نوٹس لے۔ تفصیلات کے مطابق قبائلی ضلع مہمند میں گزشتہ ہفتے کے روز بائیزئی سب ڈویژن بھائی ڈاگ میں قائم مڈل سکول کے اُستاد نے چوتھی جماعت کے طالب علم الماس خان ولد احمد خان سکنہ بائیزئی پر تشدد کے دوران لاٹھی کا وار کر کے اُن کا ہاتھ ٹوٹ گیا۔ اور پھر چار گھنٹے تک سکول میں رکھا گیا اور ڈاکٹر کو جانے نہیں دیا جس کی وجہ سے بچے کو شدید جسمانی اور ذہنی تکلیف پہنچا۔ مہمند پریس کلب میں متاثرہ طالب علم کے والد احمد خان نے میڈیاء کو بتایا کہ ہم ضلع مہمند کے پسماندہ ڈویژن سے تعلق رکھتے ہیں۔ ہم اپنے بچوں کو سکول تعلیم حاصل کرنے کیلئے بھیجتے ہیں نہ کہ اُن پر تشدد کرنے۔ ہمیں انتہائی ذہنی تکلیف دیا گیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہم نے اعلیٰ حکام کو درخواست دی ہے ۔ اور محکمہ تعلیم کے اعلیٰ حکام کو بھی آگاہ کیا ہے کہ ہمارے ساتھ انصاف کیا جائے اور ہمارے بچے پر تشدد کرنے والے اُستاد کے خلاف قانونی کاروائی کرکے انہیں سزا دی جائے۔

مزید : پشاورصفحہ آخر