دہشتگردوں کا اسلامی تعلیمات کے ساتھ کوئی تعلق نہیں،راغب نعیمی

دہشتگردوں کا اسلامی تعلیمات کے ساتھ کوئی تعلق نہیں،راغب نعیمی

لاہور( نمائندہ خصوصی )دارالعلوم جامعہ نعیمیہ کے ناظم اعلیٰ علامہ ڈاکٹرراغب حسین نعیمی نے کہاہے کہ دہشت گردی کااسلامی تعلیمات سے کوئی تعلق نہیں۔دین اسلام کی تعلیمات سے ہمیں اعتدال پسندی اورمیانہ روی کادرس ملتاہے،تکفیری کلچرل نے امت مسلمہ کو ناقابل تلافی نقصان پہنچایا۔جو قوتیں اسلام کے نام پر انسانیت کو قتل کررہی ہیں ،ان کا اسلام اور پیغمبر اسلام کے ساتھ کوئی لینا دینا نہیں۔ہمیں متحد ہوکر دہشت گردی کامقابلہ کرنے کی ضرورت ہے۔ ہمیں مل کر اسلام کی خوبصورت تصویر پیش کر نی چاہئے کیونکہ اسلام امن اور اعتدال کا مذہب ہے ان خیالات کااظہار انہوں نے گزشتہ روزڈاکٹرسرفراز نعیمی شہید ؒ ریسرچ انسٹی ٹیوٹ میں ایرانی وفد کے اعزاز میں منعقدہ استقبالیہ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔ الجامعۃ المصطفیٰ قم یونیورسٹی ایران کے وائس چانسلرآیت اللہ ڈاکٹرعلی رضا اعرافی کی سربراہی میں جامعہ نعیمیہ میں آنے والے وفد میں قونصل جنرل ایران ڈاکٹررضا ناظری،ڈائریکٹر جنرل خانہ فرہنگ ایران علی رضائی فرد،ڈکٹرسید مفید حسینی ہیڈانٹرنیشنل آفیئرز حوزہ علمیہ ایران،ڈاکٹرکاظم سلیم،ڈاکٹرسعید ی نجفی،ڈاکٹرحسنین نادر،علامہ قاضی نیاز حسین نقوی سربراہ جامعہ المنتظردیگر شامل تھے۔استقبالیہ پروگرام میں جامعہ نعیمیہ کے استاذالحدیث مفتی انور القادری،استاذ الفقہ مولانا محبوب احمدچشتی،مولانا مفتی عمران حنفی ،قاری رفیق احمدنقشبندی سمیت جامعہ نعیمیہ کے اساتذہ ،درجہ موقوف علیہ ،دورہ حدیث اورتخصص فی الفقہ کے طلباء نے بھی شرکت کی۔الجامعۃ المصطفیٰ قم یونیورسٹی ایران کے وائس چانسلرآیت اللہ ڈاکٹرعلی رضا اعرافی اس موقع پر نے جامعہ نعیمیہ کے دینی وملکی اورفلاحی خدمات کوسراہتے ہوئے کہاکہ پاک ایران تعلقات مذہب ،ثفاقت اورتعلیمی بنیادیوں قائم ہیں۔اغیار کے سازشوں کامقابلہ کر نے کیلئے امت مسلمہ کی نسل نو کو جدید وقدیم علوم سے آراستہ کیاجائے کیوں کہ علم وتحقیق وابستہ قومیں ہی دنیا میں حکمرانی کرتی ہیں۔

مزید : میٹروپولیٹن 1