چیئرمین پی اے سی کا فیصلہ گن پوائنٹ پر نہیں کروایا، احسن اقبال

چیئرمین پی اے سی کا فیصلہ گن پوائنٹ پر نہیں کروایا، احسن اقبال

اسلام آباد(آئی این پی)مسلم لیگی رہنما و سابق وزیر داخلہ احسن اقبال نے کہا ہے کہ شہباز شریف کا پی اے سی کا بطور چیئرمین انتخاب اتفاق رائے سے ہوا ہم نے کنپٹی پر پستول رکھ کر حکومت سے پی اے سی چیئرمین شپ کا فیصلہ نہیں کرایا حکومت نے فیصلے پر یوٹرن لیا تو یہ اپوزیشن کا نہیں خود حکومت، جمہوریت اور ملک کا نقصان ہوگاوہ منگل کے روز پارلیمنٹ میں خصوصی گفتگو کر رہے تھے ۔ لیگی رہنما احسن اقبال نے کہا کہ شہباز شریف کا چناو اتفاق رائے سے ہوا اس سلسلے میں سپیکر نے بہترین کردار ادا کیا لیکن پی ٹی آئی میں شامل کچھ گھس بیٹھیے حکومت کا دھڑن تختہ کرنا چاہتے ہیں پارلیمان کی کمیٹیاں سالوں سے روایات کے مطابق چل رہی ہیں، ایک عشرہ سے اپوزیشن لیڈر پی اے سی کا چیئرمین ہوتاہے پی اے سی پر یوٹرن کا مطلب حکومت خود قائم شدہ اتفاق رائے ختم کرکے ایوان کا ماحول خراب کرنا چاہتی ہے حکومت کو اپنی صفوں میں بیٹھے خود کش بمباروں سے باخبر رہنا ہوگا جوحکومت گرانا چاہتے ہیں جو حکومتی انتہاپسند اپوزیشن کو زچ کرنا چاہتے ہیں وہ شائد حکومت کا خاتمہ یا کسی کا آلہ کار بن کر نظام لپیٹنے کی سازش کررہے ہیں اپوزیشن کو فتح کرنیوالے اپنی خواہش پوری کرلیں اس سے حزب اختلاف کا نہیں نظام کا نقصان ہوگا ۔

احسن اقبال

مزید : کراچی صفحہ اول