طور خم ٹرانسپورٹرز کی غیر قانونی ٹیکس کیخلاف پہیہ جام ہڑتال کی دھمکی

طور خم ٹرانسپورٹرز کی غیر قانونی ٹیکس کیخلاف پہیہ جام ہڑتال کی دھمکی

خیبر(بیوروپورٹ)طورخم بارڈر پر سکینر کی آڑ میں این ایل سی حکام نے اگرناجائز 1000روپے کی وصولی بندنہیں کی توپہیہ جام ہڑتال کرینگے این ایل سی پہلے سے 2500 روپے ٹرانسپوٹروں سے وصول کر تے ہیں،طورخم ٹرانسپورٹ صدر حاجی عظیم اللہ ضلع خیبر طورخم بارڈر پر ٹرانسپورٹروں نے این ایل سی حکام کی طرف سے سکینر کی آڑ میں ناجائز 1000روپے کی وصولی کی شدید مذمت کی ہیں اس موقع پر طورخم ٹرانسپورٹ کے صدر حاجی عظیم اللہ عرف اوزی شنواری نے کہا کہ طورخم بارڈر پر ٹرانسپورٹرز عرصہ دراز سے مشکلات و مسائل سے دوچار ہیں اور ابھی تک ان کے مسائل کے حل کیلئے کسی نے خاطرخواہ اقدامات نہیں کئے اور نہ ہی ٹرانسپورٹروں کو کسی قسم کی سہولیات فراہم کی گئی بلکہ ٹرانسپوٹروں کے مسلسل ظلم اور ناانصافی ہو رہی ہیں انہوں نے کہا کہ گزشتہ دو دنوں سے طورخم بارڈر پر این ایل سی حکام نے سکینگ کے اڑ میں مال بردار گاڑیوں سے فی ٹرک ایک ہزار روپے وصول کرنے کا آرڈر جا ری کیا ہے جس کے لئے ٹرانسپورٹرز تیار نہیں اگر گاڑیوں کی سکنیگکی جا تی ہیں تو دوسرے ادارے پھر چیکنگ نہیں کر ینگے اور سکینگ کی پیسے بھی وصول نہیں جا ئیگی کیونکہ این ایل سی پہلے سے گا ڑیوں سے 2500 روپے وصول کرتے ہیں جبکہ دوسری طرف طورخم بارڈر پر بے جاچیکنگ کی وجہ سے ٹرانسپورٹرز کو شدید مشکلات کا سامنا ہے انہوں نے کہا کہ اگر طورخم بارڈر پر ٹرانسپورٹروں کے ساتھ این ایل سی اور دیگر حکام نے ناروا سلوک اور بے جاچیکنگ سمیت دیگر مسائل حل نہیں کی تو تین دن بعد پہیہ جام ہڑتال کرینگے جوکہ مطالبات کے تسلیم ہونے تک جاری رہے گا۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر