لاپتہ افراد کیس، سندھ ہائیکورٹ نے لاپتہ افراد کو پیش نہ کرنے پر ڈی ایس پی کو گرفتارکمرہ عدالت سے گرفتار کرادیا

لاپتہ افراد کیس، سندھ ہائیکورٹ نے لاپتہ افراد کو پیش نہ کرنے پر ڈی ایس پی کو ...
لاپتہ افراد کیس، سندھ ہائیکورٹ نے لاپتہ افراد کو پیش نہ کرنے پر ڈی ایس پی کو گرفتارکمرہ عدالت سے گرفتار کرادیا

  

کراچی(ڈیی پاکستان آن لائن)سندھ ہائیکورٹ نے لاپتہ افراد کو پیش نہ کرنے پر ڈی ایس پی تصدق وارث کو تحویل میں لینے کا حکم دیدیا،عدالت نے ریمارکس دیئے ہیں کہ ڈی ایس پی کمرہ عدالت سے باہر نہیں جائے گا،لوگ غائب ہیں کسی کو احساس ہی نہیں،جو پولیس افسرلاپرواہی برتے گا گرفتار کرنے کا حکم دیں گے ،عدالت نے محکمہ داخلہ سندھ ،آئی جی،ڈی جی رینجرز و دیگر سے جواب طلب کر لیا، عدالت نے فریقین کو 30 مارچ کو رپورٹس پیش کرنے کا حکم دیدیا۔

تفصیلات کے مطابق سندھ ہائیکورٹ میں لاپتہ افراد کی بازیابی سے متعلق درخواستوں کی سماعت ہوئی،عدالت نے لاپتہ افراد کو پیش نہ کرنے پر ڈی ایس پی تصدق وارث کو گرفتار کرنے کا حکم دیدیا،عدالت نے ریمارکس دیئے ہیں کہ ڈی ایس پی کمرہ عدالت سے باہر نہیں جائے گا۔لوگ غائب ہیں کسی کو احساس ہی نہیں،جو پولیس افسرلاپرواہی برتے گا گرفتار کرنے کا حکم دیں گے۔

عدالت نے محکمہ داخلہ سندھ ،آئی جی،ڈی جی رینجرز و دیگر سے جواب طلب کر لیا، عدالت نے فریقین کو 30 مارچ کو رپورٹس پیش کرنے کا حکم دیدیا۔عدالت نے حکم دیا ہے کہ لاپتہ افرادکوبازیاب کراکے پیش کیاجائے۔

مزید : قومی /علاقائی /سندھ /کراچی