محکمہ ایکسائز‘ 60ہزار سے زائد سمارٹ کارڈ لاپتہ‘ شہری دربدر

  محکمہ ایکسائز‘ 60ہزار سے زائد سمارٹ کارڈ لاپتہ‘ شہری دربدر

  



ملتان (نیوز رپورٹر) صوبائی وزیر ایکسائز ٹیکسیشن اینڈ نارکوٹکس کنٹرول پنجاب حافظ ممتاز احمد اور سیکرٹری ایکسائز پنجاب وجیہ اللہ کنڈی کی جانب سے سمارٹ کارڈ کی ملتان سمیت جنوبی پنجاب کو فراہمی میں تیزی لانے کے دعوے دھرے کے دھرے رہ گئے ایکسائز (بقیہ نمبر56صفحہ12پر)

آفس ملتان میں رجسٹرڈ ہونیوالے موٹر سائیکلز، کاروں سمیت دیگر وہیکلز کے 60 ہزار سے زائد سمارٹ کارڈز بدستور تاخیر کا شکار ہیں جس کے باعث شہریوں کو شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑرہا ہے ذرائع کے مطابق محکمہ ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن پنجاب لاہور کے زیر اہتمام روزانہ کی بنیاد پر 24 ہزار سمارٹ کارڈ پرنٹ کیئے جارہے ہیں جبکہ اعلی بیوروکریسی کی دلچسپی سے فقط چند دنوں میں سمارٹ کارڈ بحران کو حل کیا جاسکتا ہے لیکن ملتان سے متعلقہ کارڈز کی محدود تعداد میں پرنٹنگ کے باعث مسئلہ جوں کا توں موجود ہے جس کے باعث رجسٹرڈ گاڑیوں کے ملکیتی سمارٹ کارڈ دستیاب نہ ہونے کی وجہ سے خرید و فروخت بھی تھپ ہوکر رہ گئی ہے واضح رہے کہ ملتان آفس کو لاہور سے 7 جنوری کو 2600 کارڈ اور 17 جنوری کو 3200 کارڈ موصول ہوئے تھے جبکہ ایک ماہ بعد مزید 6000 ہزار کارڈز کی فراہمی آئندہ تین دنوں تک متوقع ہیں اگر کارڈ کی فراہمی کا سلسلہ یونہی سست روی کا شکار رہا تو مارچ کے اوائل تک سمارٹ کارڈز کا بحران مزید بڑھ سکتا ہے۔

دربدر

مزید : ملتان صفحہ آخر