اوقاف کرایوں میں 300گنا اضافہ‘ تاجر تحریک چلانے کیلئے تیار

  اوقاف کرایوں میں 300گنا اضافہ‘ تاجر تحریک چلانے کیلئے تیار

  



ملتان(نیوز رپورٹر ) مرکزی تنظیم تاجران پاکستان کے مرکزی چیئرمین خواجہ سلیمان صدیقی نے کہا ہے کہ مسلم ا وقاف نے کرایہ دار دکانوں کے کرایوں میں اوقاف قانون(بقیہ نمبر41صفحہ7پر)

کے برعکس بڑھایا گیا ساڑھے تین سو گنا اضافہ واپس نہ لیا تو غریب دکانداروں کے حقوق کے لئے تاجر برادری سڑکوں پر آنے پر مجبور ہوجائے گی اور شٹر ڈاؤن سے بھی گریز نہیں کریں گے یہ کتنی بڑی بدقسمتی ہے کہ ہندو اوقاف نے دکانوں کے کرایوں میں اضافہ نہیں کیا لیکن مسلم اوقاف نے انتہا کردی اس وقت پانچ سے چھ ہزار دکانیں کرایہ پر ہیں اور ان دکانوں پر کام کرنے والے غریب دکاندار شدید پریشانی کا شکار ہیں اسی لئے اوقاف انتظامیہ کرایوں میں اضافہ کے نوٹس دینے کی بجائے قانون کے مطابق اقدامات کرے کیونکہ کرایوں میں اضافہ کا اوقاف ملتان انتظامیہ کو کوئی اختیار نہیں ہے ان خیالات کا اظہار انہوں نے پریس کلب میں پریس کانفرنس میں کیاا س موقع پر دیگر رہنماؤں شیخ اکرم حکیم، شیخ جاوید اختر، خالد محمود قریشی، سید جعفر علی شاہ،مرزا نعیم بیگ، صدر انجمن تاجران مسلم اوقاف ملتان شاہد محمود انصاری، شیخ ناصر، خواجہ طاہر صدیقی، رمضان جانی، ملک محبوب اعوان ودیگر موجود تھے خواجہ سلیمان صدیقی نے مزید کہا کہ محکمہ اوقاف قانون کے مطابق ہر تین سال بعد کرایوں میں 25فی صد اضافہ کیا جاتا ہے لیکن صورتحال یہ ہے کہ 25فی صد کی بجائے ساڑھے تین اضافہ کے نوٹس بھیج دیئے ہیں جس کی زندہ مثال یہ ہے کہ اگر ایک دکان کا کرایہ 8سو روپے ہے تو اس کا 9ہزار اور جس کا پانچ ہزار کرایہ تھا تو اس کا بیس ہزار کرایہ بڑھا کر غریب دکانداروں کو نوٹس بھیج دیئے حالانکہ گذشتہ ڈیڑھ دو سال سے معاشی حالات انتہائی خراب ہیں اور گھریلو تک کے اخراجات پورے کرنا مشکل ہو گئے ہیں اندھی کھوئی، دہلی گیٹ مارکیٹوں سمیت دیگر مارکیٹوں اور بازاروں میں غریب دکانداروں کی نیندیں حرام ہو گئی ہیں اور وہ شدید پریشانی کا شکار ہیں اس سلسلے میں جب اوقاف ملتان ایڈمنسٹریٹر سے بات چیت کی گئی تو ان کا یہ کہنا کہ صوبائی اوقاف حکومت ہی اب سب کچھ کرسکتی ہے جبکہ اوقاف ملتان انتظامیہ کو تو یہ اختیار ہی نہیں ہے کہ وہ کرایوں میں اس طرح ساڑھے تین سو گنا تک اضافہ کرے اگر زبردستی کرنے کی کوشش کی گئی تو زبردستی سے جواب دیا جائے گاخواجہ سلیمان صدیقی نے مزید کہا کہ تاجر اور دکاندار پہلے ہی پسا ہوا طبقہ ہیں ایسی ناانصافی کو ہر گز قبول نہیں کریں گے اسی لئے وزیر اوقاف،سیکریٹری اوقاف کو چاہیئے کہ وہ محکمہ قانون کے مطابق کرایہ بڑھائیں نہ کہ من مرضی سے تین تین سو فی صد تک اضافہ کردیا جائے صدر انجمن تاجران مسلم اوقاف ملتان شاہد محمود انصاری نے کہا کہ اوقاف کرایہ دار دکانداروں کو اوقاف ملتان انتظامیہ کی جانب سے حراساں و پریشان کیا جارہا ہے اور اوقاف کی جانب سے بڑھایا گیا کرایہ کے ووچرز لینے پر مجبور کیاجارہا ہے غریب دکانداروں کے ساتھ ایسے ناروارویے کی ہم شدید مذمت کرتے ہیں اور مطالبہ کرتے ہیں کہ اوقاف ملتان انتظامیہ ایسا کوئی اقدام نہ کرے کہ جس کی وجہ سے غریب دکاندار سڑکوں پر آنے پر مجبور ہوجائیں۔

تیار

مزید : ملتان صفحہ آخر