پولیو مہم کو ہر صورت کامیاب بنائیں گے،ڈی پی او شانگلہ

    پولیو مہم کو ہر صورت کامیاب بنائیں گے،ڈی پی او شانگلہ

  



  

الپوری(ڈسٹرکٹ رپورٹر)شانگلہ کے ڈسٹرکٹ پولیس آفیسر شانگلہ ملک اعجاز نے 17فروری سے شروع ہونے والے پولیو مہم کو کامیاب بنانے کیلئے تمام تر دستاب وسائل بروئے کار لائی جائیگی کوئی بھی پولیس جوان پولیو ڈیوٹی سے غیر حاضر نہ رہے اور نہ ہی بغیر سیکورٹی پولیو ٹیم علاقہ کو جائے گی، جاتے وقت پولیس جوانوں کیساتھ اسلحہ ہو گا اور انتہائی الرٹ پوزیشن اور ہوشیاری سے اپنے فرائض منصبی سر انجام دیں گے میں خود بھی امانیٹرنگ کرتا رہووں گا۔ہر تھانے کے حدود میں دو موبائل مسلسل پٹرولنگ کریں گے اور ساتھ ہی ناکہ بندیاں بھی ہو گی۔انتہائی حساس اور دیگر حساس علاقوں کی روڈز قبل از وقت بی ڈی ایس سکواڈ کلیئر کریں گے۔ ان خیالا ت کا اظہار انھوں نے بد ھ کے روز اپنے دفتر میں پولیس آفیسران کا ایک اعلیٰ سطحی اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہی۔ اجلاس میں ایس پی انوسٹی گیشن شانگلہ مزمل شاہ جدون، ڈی ایس پی ہیڈ کوارٹر نصیب شاہ، سب ڈویژنل پولیس آفیسر الپوری ظاہر شاہ خان، سب ڈویژنل پولیس آفیسرپورن زیراب گل، تمام ایس ایچ اوز اور بی ایچ اوز انچارجان، انچارج ڈی ایس بی اور دیگر متعلقہ پولیس آفیسران شامل تھے۔17فروری سے 19فروری کو ہونے والے پولیو مہم کو کامیاب بنانے اور پولیو ٹیموں کی حفاظت کو مزید سخت کرنے اور امن و امان کی فضاء کو برقرار رکھنے کیلئے ڈی پی او شانگلہ ملک اعجاز نے باقاعدہ سیکورٹی پلان جاری کر دیا۔ پولیو مہم کے دوران کل 859ٹیمیں حصہ لیں گے سب ڈویژنل پولیس آفیسران،ایس ایچ اوز حساس اداروں کی باہمی مشاورت سے ڈی پی او نے 32علاقوں کو انتہائی حساس، 340حساس جبکہ487نارمل قرار دے دیا۔ انتہائی حساس علاقوں میں ایک پولیو ٹیم کیساتھ تین پولیس جوانان ڈیوٹی پر موجود ہونگے جبکہ 340حساس علاقوں میں پولیو ٹیموں کے ساتھ 2پولیس جوانان تعینات ہونگے اسی طرح نارمل 487علاقوں میں پولیو ٹیموں کیساتھ1 پولیس جوان ڈیوٹی سر انجام دیں گے۔ اس سلسلے میں ضلعی کے داخلی اور خارجی راستوں پر مزید نفری تعینات کر دی گئی۔ڈی پی او شانگلہ ملک اعجاز نے مزید کہا کہ اسی قت تک ایس ڈی پی اوز، ایس ایچ اوز اور میں خود ان روڈ ہو گا جب تک پولیو کی ٹیمیں واپس نہ پہنچی ہوں ان کی حفاظت میں کوئی کسر باقی نہیں چھوڑیں گے۔تمام پولیس جوانوں کیساتھ جیکٹ ہلمٹ اور بڑا ہتھیار لازمی ہو گا۔ علاوہ ازیں پولیو مہم کے دوران94PQR بھی ڈیوٹیاں سر انجام دیں گے۔ شانگلہ ایک پر امن ضلع ہے لیکن یہاں پر امن و امان کی فضاء کو برقرا ر رکھنے کیلئے گشت کی نظام کو مزید بہتر کرنا چایئے۔ پولیس آفیسران پر زور دیا کہ کوتاہی ہر گز برداشت نہیں کی جائے گی۔ انتہائی دلیری، جانفشانی اور لگن کیساتھ اپنی فرائض منصبی سر انجام دیں۔انھوں نے کہا کہ تمام جوانوں کو ڈیوٹی پر روانگی سے قبل انہیں موجودہ حالات کے نسبت بریفنگ دے اور انہیں ہدایت کریں کہ ڈیوٹی میں غفلت اور کوتاہی ہرگز برداشت نہیں کی جائے گی۔ اس موقع پر انھوں نے کہا کہ نیشنل ایکشن پلان پر عملدرامد کرتے ہوئے ہوٹلوں، سرائے، کرایہ داروں اور دیگر پوئنٹسوں کی چیکنگ انتہائی ضروری ہے۔ ڈ ی پی او شا نگلہ ملک اعجاز نے ایس ایچ او زکو سختی سے ہدایت جاری کردی کہ پولیو ٹیموں کے ساتھ تعینات پولیس جوانوں کی موبائل نمبرات کی فہرستیں تیار کرناتاکہ بوقت ضرورت کام اسکیں۔ انھوں نے مزید کہا کہ پولیس جوانوں کیساتھ اسلحہ کندھوں پر لٹکا ہوا نظر نہیں انا چایئے بلکہ بڑے سلینگ کے زریعے یا ہاتھ میں ہونا چایئے۔ جب تک پولیس فعال ہو گا اسی وقت تک کوئی بھی جرائم پیشہ عناصر جرم نہیں کر سکتے۔ اجلاس کے اخر میں ڈی پی او شا نگلہ نے مارتونگ پولیس کانسٹیبل محمد علی قتل کیس کو جلد از جلد ٹریس کرنے کی نسبت بھی سختی سے ہدایت جاری کر دی۔۔

مزید : پشاورصفحہ آخر