بنوں پولیس امن کے قیام کیلئے اہم کردار ادا کیا،عبدالغفور آفریدی

  بنوں پولیس امن کے قیام کیلئے اہم کردار ادا کیا،عبدالغفور آفریدی

  



بنوں (بیورورپورٹ)ڈپٹی انسپکٹر جنرل آف پولیس بنوں ریجن عبدالغفور خان آفریدی ڈی پی او یاسر آفریدی نے کہا ہے کہ دہشت گردی کے خلاف جنگ سمیت دیگر مواقوں پر بنوں پولیس نے فرنٹ لائن پر لڑکر دھرتی پر امن کی بحالی میں صفہ اول کا کردار ادا کیا ہے بنوں ریجن میں کوئی بھی پولیس آفیسر سیاسی دباؤ قبول نہیں کریں پولیس مکمل طور پر آزاد ہے عوام کے تحفظ اور مظلوموں کی دادسی میں کسی قسم کی کوئی برداشت نہیں کیا جائیگا تھانوں کی سطح پر کھلی کچہریوں کا انعقاد یقینی بنانے اور عوام کو زیادہ سے زیادہ ریلیف دینے کیلئے پولیس کی سطح پر اقدامات اُٹھائے جائیں ریجن میں امن خراب کرنے والوں کو کسی بھی صورت نہیں چھوڑا جائیگا دنوں اضلاع کے پولیس نے جس دلیری کے ساتھ امن کی بحالی میں جانوں کی قربانیاں دی ہے وہ تاریخ کا ہمیشہ حصہ رہیگا ان خیالات کا اظہار انہوں نے فضل قادر شہید پارک ایڈٹیوریم میں منعقد ہ پولیس دربار سے خطاب کرتے ہوئے کیا اس موقع پر ڈسٹرکٹ پولیس آفیسر یاسر آفریدی نے ڈی آئی جی بنوں کو ضم ہونے والے حاصہ داروں اور لیویز اہلکاروں کے اس موقع پر ڈی پی او یاسر خان آفریدی سمیت دیگر افسران اور اقوام بنوں کے مشران ملک عصمت اللہ خان آمندی انعام الحق سورانی سمیت دیگر مشران موجود تھے ڈی آئی جی بنوں رینج عبدالغفور آفریدی نے کہا کہ پولیس کو درپیش مسائل کے حل کیلئے کمیٹی تشکیل دیا گیا ہے جو مسائل کے حوالے سے رپورٹ کریگی بنوں اور لکی مروت میں امن کی بحالی پر کوئی سمجھوتہ نہیں کیا جائیگا پولیس کو ہر قسم کے سیاسی دباؤ سے آزاد ہے تاہم پولیس افسران کسی بھی معاملے میں دباؤ کو قبول نہ کریں اگر کوئی سیاسی دباؤ ڈالنا چاہتا ہے تو ہمیں آگاہ کیا جائے انہوں نے کہا کہ دہشت اور حوف کی فضاء کو ختم کرنے بنوں کے بہادر پولیس فورس کی قربانیاں رئیگا نہیں جائیگی پولیس عوام کے جان ومال کے تحفظ کیلئے ہیں پولیس افسران دیگر کاموں میں مداخلت نہ کریں جن پولیس افسران کی دوسروں کے کاموں میں مداخلت کے شواہد ملے تو ان کے خلاف سخت کاروائی کی جائیگی اُن کا کہنا تھا کہ ریجن پولیس کے مسائل وضروریات کے حوالے سے آئی جی ثناء اللہ عباسی کو آگاہ کردیا گیا ہے انہوں نے کہا کہ ڈی ار سی کے ذریعے عوام کے مسائل گھر کے دہلیز پر حل کرنے کیلئے کوشاں ہے پبلک لیزان کمیٹیوں کے قیام سے تھانوں پر بوجھ کم ہوا ہے کیونکہ ان ہی کمیٹیوں کے ذریعے کیسز کو حل کیا جارہا ہے انہوں نے کہا کہ بنوں کے امن تباہ کرنے کو کسی کو بھی اجازات نہیں دینگے بنوں اور خصوصا ریجن پولیس کسی بھی دہشت گردانہ حملوں سے نمٹنے کیلئے ہائی الراٹ ہے لہذا جہاں بھی پولیس افسران کو تکلیف کا سامنا ہو وہ بلاحوف اعلیٰ افسران کے دفتروں میں آئیں۔

مزید : پشاورصفحہ آخر