پولیس شہداء کے بچوں کو بھرتی نہ کرنے کیخلاف مظاہرہ

  پولیس شہداء کے بچوں کو بھرتی نہ کرنے کیخلاف مظاہرہ

  



پشاور(سٹی رپورٹر) پولیس شہداء کے بچوں نے حکومت کی جانب سے بھرتی نہ کرنے کے خلاف گزشتہ روز پشاور پریس کلب کے باہر احتجاجی مظاہرہ کیا جس کی قیادت اسد ولد طاقت خان شہید‘ بلال احمد ولد اعجاز احمد شہید‘ اقرار خان اور دیگر کر رہے تھے۔ مظاہرین نے ہاتھوں میں پلے کارڈز اوربینرز اٹھا رکھے تھے جس پر انکے مطالبات کے حق میں نعرے درج تھے۔ مظاہرین سے خطاب کرتے ہوئے مقررین کا کہنا تھا کہ پولیس شہداء کے200 سے زائد تاحال نوکریوں سے محروم ہیں حالانکہ حکومت اور محکمہ پولیس نے ان سے وعدہ کیا تھا کہ شہداء کے بچوں کو بطور اے ایس آئی بھرتی کیا جائیگا۔ انہوں نے کہا کہ جب بھی ہم بھرتی کیلئے دفتر جاتے ہیں تو وہاں پر موجودآفیسرز اہمیں نئی تاریخ دے دیتے ہیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ پولیس شہداء کے بچوں کی بھرتی کا مسئلہ آئی جی آفس اور ہوم ڈیپارٹمنٹ میں لٹک گیا ہے جس کے حوالے سے مختلف فورم پر آواز اٹھایا ہے مگر کوئی شنوائی نہیں ہوئی ہے۔ انہوں نے دھمکی دی کہ اگر فوری طور پر ان کے مطالبات نہ مانے گئے تو وہ احتجاج کا دائرہ وسیع کرنے پر مجبور ہو جائینگے۔

مزید : پشاورصفحہ آخر