مہمند،روڈ متاثرین تا حال معاوضہ سے محروم

      مہمند،روڈ متاثرین تا حال معاوضہ سے محروم

  



مہمند(نمائندہ پاکستان)مہمند،روڈ متاثرین تاحال معاوضہ سے محروم۔چھ کلو میٹر تعمیر شدہ سڑک سے مقامی آبادی کی زیر کا شت زمین متاثر ہوا، روڈ تعمیر کے وقت زمین مالکان سے معاوضوں کے وعدے کئے گئے تھے مگر تاحال محکمہ اپنے کئے گئے وعدوں سے مُکر گیا ہے۔ غریب عوام کو متاثرہ زمین کا معاوضہ دیا جائے۔متاثرین تحصیل حلیمزئی کے علاقہ کوزگنداوٗ چاندہ ٹو میلہ بخش بابا روڈ جون 2019میں مکمل کی گیا ہے۔جن میں مقامی آبادی کے زیر کاشت زمین متاثرہواجبکہ روڈ سے متاثرہونے والے زمین مالکان سے منظوری اور تعمیر کے وقت زمین کے معاوضوں اور کمیشن دینے کا وعدہ کیا گیا تھا۔ جن میں روڈ تعمیر کیلئے منظوری کئے 72.361ملین روپوں میں زمین مالکان کو ملنے والا 6.25فیصد کمیشن کے حساب سے 47لاکھ روپے بنتے ہیں۔مگر زمین مالکان کو ابھی تک ایک روپیہ بھی نہیں دیاگیا۔جبکہ اس کے برعکس محکمہ سی اینڈ ڈبلیو ہر سرکاری ٹھیکہ میں 14فیصد حصہ وصول کرتا ہے۔جبکہ غریب عوام کو اپنے آبا واجداد کی ملکیت چھین کر کوئی معاوضہ نہیں دیا جاتا۔ان خیالات کا اظہار چاندہ ٹو میلہ بخش باباتک تعمیر چھ کلو میٹر روڈ متاثرہ زمین کے مالکان شاکرخان،اسلام خان،واصف خان،شمس الرحمان وغیرہ نے ایک اخباری بیان دیتے ہوئے کہاکہ اگر متاثرہ زمین مالکان کو معاوضہ فوری ادا نہ کیا گیا تو ہم مجبوراََعدالت جانے کا راستہ اختیار کریں گے۔

مزید : پشاورصفحہ آخر