’ کھانے کے ساتھ یہ چیز استعمال کرنا شروع کی اور 60 کلو وزن کم کر ڈالا ‘ اپنے جسم کا آدھا وزن کم کرنے والی نوجوان لڑکی نے موٹے افراد کو پتلا ہونے کا آسان ترین طریقہ بتا دیا

’ کھانے کے ساتھ یہ چیز استعمال کرنا شروع کی اور 60 کلو وزن کم کر ڈالا ‘ اپنے ...

کوپن ہیگن (نیوز ڈیسک) موٹاپہ کم کرنے کے لئے آپ نے بہت سی تراکیب اور طریقوں کے بارے میں سنا ہوگا لیکن شاید ہی کبھی سنا ہو کہ چائے کا چمچ بھی اس مصیبت سے چھٹکارہ دلانے کی وجہ بن سکتا ہے۔

ڈیلی میل کی رپورٹ کے مطابق یہ حیران کن انکشاف ڈنمارک کے شہر آرہس سے تعلق رکھنے والی 21 سالہ لڑکی مٹیلڈا بروبرگ نے کیا ہے۔ ان کا کہنا ہے کہ وہ بچپن سے ہی بسیار خوری کی جانب مائل تھیں۔ ان کی روزانہ کی خوراک میں ڈھیروں فاسٹ فوڈ اور میٹھی اشیاءشامل ہوتی تھیں۔ چاکلیٹ ، کیک، چپس ، مٹھائیاں، پاستا اور بریڈ جیسی غذاﺅں کا بے تہاشا استعمال کرنے کا نتیجہ یہ ہوا کہ ان کا وزن بڑھتا بڑھتا 126 کلو گرام تک جا پہنچا۔

انہیں موٹاپے کی وجہ سے چلنے پھرنے میں بھی دشواری پیش آنے لگی جبکہ لوگوں کی حقارت اور مذاق کا مسئلہ الگ درپیش تھا اور ایک روز تو حد ہی ہو گئی۔ وہ ایک تفریحی پارک کی سیر کو گئیں تو پارک کے عملے نے یہ کہہ کر انہیں رولر کوسٹر سے اتار دیا کہ اتنے وزن کے ساتھ رولر کوسٹرچلے گی کیسے۔ ان کیلئے رولر کوسٹر کی سیٹ میں بیٹھنا اور حفاظتی بیلٹ بند کرنا کسی طور ممکن نہیں ہو پا رہا تھا۔ مٹیلڈا کا کہنا ہے کہ یہ صورتحال دیکھ کر ان کی آنکھوں میں آنسو آگئے اور انہوں نے عہد کر لیا کہ وہ اپنا وزن کم کر کے رہیں گی۔

اگرچہ وہ موٹاپے میں کمی کیلئے پہلے بھی کئی کوششیں کر چکی تھیں لیکن اس بار انہیں ایک اچھوتا خیال آیا۔ انہوں نے نہ صرف کھانے کی مقدار کو محدود کر دیا بلکہ اسے عام چمچ کی بجائے چائے والے چھوٹے چمچ کے ساتھ کھانا شروع کر دیا۔ مٹیلڈا کا کہنا ہے کہ چائے والے چھوٹے چمچ سے کھانے کی وجہ سے انہیں اپنی غذا کی مقدار کم کرنے میں بہت مدد ملی کیونکہ چھوٹے چمچ سے کھانے کی وجہ سے انسان نفسیاتی طور پر جلد سیر ہو جاتا ہے۔

ایک طویل عرصے تک انہوں نے مرغن اور میٹھی غذاﺅں سے پرہیز جاری رکھا ، ورزش کو بھی اپنا معمول بنایا اور اس بات کا خیال رکھا کہ ہمیشہ چائے والے چمچ سے کھانا کھائیں۔ ان کی مسلسل محنت اور احتیاط کا نتیجہ یہ ہوا کہ اب ان کا وزن 67 کلو گرام ہے۔ حال ہی میں انہوں نے سپورٹس ماڈلنگ کا کام بھی شروع کر دیا ہے۔ مٹیلڈا کہتی ہیں کہ اگرچہ مرغن اور میٹھی غذاﺅں سے پرہیز اور ورزش نے بھی ان کی بہت مدد کی لیکن بڑے چمچ کی بجائے چائے کے چھوٹے چمچ نے واقعی کمال کر دکھایا۔

مزید : تعلیم و صحت