پی وائے ڈی کو بھی امن مذاکرات کا ایک حصہ بنایا جائے، امریکا

پی وائے ڈی کو بھی امن مذاکرات کا ایک حصہ بنایا جائے، امریکا

واشنگٹن (اے پی پی) امریکا نے شام میں طویل المدت سیاسی حل کے لیے پی وائے ڈی کو بھی مذاکرات کی میز پربٹھانے کی ضرورت پر زور دیا ہے۔وزارت خارجہ کے ترجمان مارک ٹونر نے پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ شام کی خانہ جنگی کو اقوام متحدہ کی زیر قیادت مذاکرات کے ذریعے حل کرنے کی ضرورت ہے اور امن مذاکرات میں شرکت کا فیصلہ متعلقہ گروپ اور شامی عوام ہی کریں گے۔ اس سوال کہ کیا آپ کا اشارہ پی وائے ڈی کو مذاکرات کی میز پر بٹھانا ہے کے جواب میں کہا کہ ہمارے خیال میں پی وائے ڈی کو بھی امن مذاکرات کا ایک حصہ بنایا جانا چاہئیے کیونکہ یہ گروپ جنگ میں شامل ہے اور شام میں طویل المدت سیاسی حل کے لیے پی وائے ڈی کو بھی مذاکرات میں شامل کرنیکی ضرورت ہے۔

مارک ٹونر نے کہا کہ امریکہ نے پی کے کے کی شام میں مسلح شاخ وائے پی جی کو اسلحہ فراہم نہیں کیا ہے۔ایک صحافی کی وزیر دفاع ایشٹن کارٹر کے سینٹ سے خطاب میں پی وائے ڈی کو اسلحہ دینے کے اعتراف کی یاد دھانی پر کہا کہ ہم ان کے اس بیان سے اتفاق نہیں کرتے ۔

مزید : عالمی منظر