سعودی عرب نے تیل کی پیداوار میں مزید کمی کردی

سعودی عرب نے تیل کی پیداوار میں مزید کمی کردی
سعودی عرب نے تیل کی پیداوار میں مزید کمی کردی

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

ریاض، ابوظہبی (ڈیلی پاکستان آن لائن) سعودی عرب نے تیل کی پیدوارمزید کم کردی ہے جس کے بعدسعودی تیل کی پیداوار دوسال کی کم ترین سطح پرآگئی ، پیداوارمیں کمی کی وجہ سے عالمی منڈی اور پھرپاکستان میں تیل کی قیمتوں میں اضافے کاخدشہ ہے ۔

سعودی وزیرتوانائی خالد الفالح نے تیل کی پیداوار کی کمی کا باضابطہ اعلان کرتے ہوئے کہاکہ یومیہ 10ملین بیرل پیداوار میں کمی کی ہے جو کہ آرگنائزیشن آف پٹرولیم ایکسپورٹنگ کانٹریز(اوپیک )اور نان اوپیک ممالک کے درمیان طے پانیوالے معاہدے سے بھی زیادہ ہے ۔

ابوظہبی میں گلوبل انرجی فورم سے گفتگوکرتے ہوئے کہاکہ’ پیداوار نمایاں طورپر کم نہیں‘ابتدائی طورپر 10ملین بیرل یومیہ کم ہوئی ہے اور فروری میں مزید کمی کیلئے منصوبہ بندی کررہے ہیں، وہ توقع کرتے ہیں کہ پیداوار میں کمی کے معاہدے کے تحت آئندہ دوسے تین سالوں میں تیل کی مارکیٹ مزید سخت ہوگی ، ہم ایک مرتبہ پھر مارکیٹ میں بیلنس کرنے کی طرف بڑھ رہے ہیں۔اُنہوں نے یہ بھی پیشن گوئی کی کہ رواں سال یومیہ ایک ملین بیرل تیل کی کھپت میں اضافہ ہوگا۔

دوسری طرف کویت کے کے وزیرپٹرولیم اسام المرزوق نے کہاکہ کویت ن ے شمالی امریکہ اور یورپ کیلئے ایک لاکھ 33ہزار بیرل یومیہ تیل کی پیدوار میں کمی کردی ہے تاہم ایشیاءکیلئے تاحال پوری برآمدجاری ہے۔

تیل کی پیدوار میں کمی کی وجہ سے عالمی مارکیٹ میں پٹرولیم مصنوعات کی قلت اور قیمتوں میں اضافے کا خدشہ ہے جس کی وجہ سے پاکستان میں بھی تیل کی قیمتیں ایک مرتبہ پھر بڑھ سکتی ہیں۔

مزید : بزنس