محکمہ سوئی گیس سے 3ارب30 کروڑ سیلز ٹیکس کی وصولی روکنے کا حکم

محکمہ سوئی گیس سے 3ارب30 کروڑ سیلز ٹیکس کی وصولی روکنے کا حکم

لاہور(نامہ نگار خصوصی ) لاہور ہائیکورٹ نے ایف بی آر کو محکمہ سوئی گیس سے 3ارب30 کروڑ کے سیلز ٹیکس کی وصولی تاحکم ثانی روک دی ہے ۔عدالت نے یہ عبوری حکم امتناعی محکمہ سوئی گیس کی درخواست پر جاری کیا ہے ۔ محکمہ نے موقف اختیار کیا ہے کہ ایف بی آر نے سیلز ٹیکس واجبات کی عدم ادائیگی پر سوئی گیس محکمہ بنک اکاونٹ منجمد کرنے کے مراسلے جاری کئے ہیں حالانکہ سیلز ٹیکس واجبات کے خلاف اپیل ایپلیٹ ٹربیونل ان لینڈ ریونیو کے پاس زیر التواء ہے۔ لہذا اپیل کے حتمی فیصلے تک بنک اکاؤنٹ منجمد کر کے رقم وصول نہیں کی جا سکتی۔ایف بی آر کے وکیل نے عدالت کو بتایا کہ محکمہ سوئی گیس ساڑھے تین ارب روپے کا نادہندہ ہے۔ اور اس رقم کی عدم ادائیگی پر محکمہ سوئی گیس ٹیکس چوروں کی فہرست میں شامل ہے۔ انھوں نے مزید کہا کہ سیلز ٹیکس، جرمانے اور ڈیفالٹ سرچارجز کے واجبات محکمہ سوئی گیس سے وصول کئے جانے ہیں اور دانستہ ٹیکس نہ دینا ٹیکس چوری کی زمرے میں آتا ہے۔ اس لئے ایف بی آر نے محکمہ سوئی گیس کے بنک اکاؤنٹ منجمد کر کے 90 ملین روپے برآمد کر لئے ہیں مگر محکمہ سوئی گیس سے 3ارب30 کروڑ وصول کرنا باقی ہیں۔عدالت نے تفصیلی دلائل سننے کے بعد ایک ماہ کے لئے حکم امتناعی جاری کرتے ہوئے قرار دیا کہ ایپلیٹ ٹربیونل کے فیصلے تک محکمہ سوئی گیس سے وصولی نہ کی جائے اور نہ ہی ان کے بنک اکاؤنٹ منجمد کئے جائیں۔

روکنے کا حکم

مزید : صفحہ آخر