نیب نے کئی میگا کرپشن سکینڈلز بے نقاب کئے ہیں، ڈی جی نیب لا ہور

نیب نے کئی میگا کرپشن سکینڈلز بے نقاب کئے ہیں، ڈی جی نیب لا ہور

لاہور(خبرنگار ) قومی احتساب بیورو) نیب( بدعنوانی کے تدارک و استحصال کیلئے روز اول سے کوشاں ہے اور اس سلسلہ میں چیئر مین نیب قمر زمان چودھری کی انتھک کاوشوں کے نتیجے میں پچھلے3 سالوں میں بدعنوان عناصر کے خلاف کارروائی کرتے ہوئے نیب نے کئی میگا کرپشن سکینڈلز بے نقاب کئے، علاوہ ازیں بہت سے بیوروکریٹس، تاجر، رئیل اسٹیٹ ایجنٹس، مختلف سرکاری و غیر سرکاری اداروں کے سربراھان اور پولیس افسران کے خلاف کارروائی عمل میں لاتے ہوئے ان با اثر ملزمان کو قانون کی گرفت میں لایا گیا۔بطورچیئر مین انہوں نے نہ صرف ادارے کو متحرک کیا بلکہ کئی ایسی اصلاحات بھی متعارف کروائیں جنکی رو سے نیب کلی طور پر 285 ارب روپے وصول کر چکا ہے۔ اس بارے نیب لاہور کی کارکردگی کے حوالے سے ڈائریکٹر جنرل نیب لاہور میجر سید برہان علی (ریٹائرڈ) نے گزشتہ روز صحافیوں کوبتایا کہ انسداد بدعنوانی کیلئے نیب اپنی مثال آپ ہے ۔نیب کا لوٹی گئی رقوم کی برآمدگی اور کرپٹ عناصر کو سزائیں دلوانے میں ہمیشہ اہم کردار رہا ہے اور اسی سلسلے کو تقویت دینے میں نیب لاہور آج بھی کار بند ہے۔نیب لاہور کی گزشتہ دو سالہ کارکردگی کا تقابلی جائزہ لیتے ہوئے ان کا کہنا ہے کہ سال2015-16 میں پلی بارگین اوروالنٹری ریٹرن کے تحت نیب لاہور 3270 ملین روپے وصو ل کر چکا ہے۔ 2015میں نیب لاہور کو4866شکایات موصول ہوئیں اور4874شکایات کو نمٹا دیا گیا جبکہ سال 2016 میں نیب لاہور کو 7969 شکایات موصول ہوئیں اور7433شکایات کو نمٹا دیا گیاکلی طو ر پر نیب لاہورکو 12835 شکایات موصول ہوئیں جن میں سے12308کو نمٹایا گیا اسکے علاوہ دو پچھلے سا لوں میں 864شکایات کی تصدیق ہوئی جن میں سے 810 شکایا ت کو نمٹایا گیا سا ل2015میں 258شکایا ت کی تصدیق ہوئی جبکہ 271کو نمٹایا گیا اور سا ل2016میں 606 شکایات کی تصدیق ہوئی جن میں سے 539کو نمٹا دیا گیا۔ 2015سے اب تک انکوائری کے مراحل میں 418شکایات کو داخل کیا گیا جن میں سے 388انکوائریاں مکمل کی گئیں۔ ڈی جی نیب نے کہا کہ پچھلے دو سالوں میں 207تحقیقات منظور کی گئیں جبکہ 246تحقیقات کو نمٹا دیا گیا سا ل2015 میں82 تحقیقات منظور کی گئیں جبکہ 119کو مکمل کیا گیا ا سی طر ح سا ل 2016میں 125 تحقیقات منظور کی گئیں جبکہ 127 کو مکمل کیا انہوں نے کہا کہ نیب لاہوراپنے قیام سے اب تک 974ریفرینسز احتساب عدالتوں میں داخل کر چکا ہے۔پچھلے دو سالوں میں 225ریفرینسز احتساب عدالت میں دائر کئے گئے سال 2015میں 98ریفرینس ، جن کی رقم 6585.6 ملین تھی اور سال 2016 میں 127 ریفرینسزداخل کئے گئے جن کی رقم 12814.9 ملین ہے اس طرح پچھلے دو سالوں میں نیب لاہور نے 655 ملزمان کے خلاف کلی طور پر 19400.5 ملین روپے کے ریفرینسز دائر کیے ۔ جن میں سے 86 ریفرینسز کے فیصلے ہو چکے ہیں ۔سال 2015 میں 37 اور سال 2016 میں 49ریفرینسز کے فیصلے کئے گئے۔ اسکے علاوہ نیب لاہور نے اپنے قیام سے اب تک 1115ملزمان کو گرفتار کیا جن میں سال 2015سے اب تک 281ملزمان کی گرفتاری عمل میں لائی گئی۔ ڈجی نیب لاہور کے مطابق سال 2015میں احتساب عداتوں کی جانب سے نیب لاہورکے ملزمان کو دی گئی سزاؤں کا تناسب 53فیصد رہا اور 2016میں یہ تناسب 94فیصد تک رہا ہے جو کہ پچھلے سالوں کی نسبت کہیں بہتر ہے۔نیب لاہور کی کارکردگی پر مزید روشنی ڈالتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ایک قومی ادارہ ہونے کے باعث نیب کو اپنی ذمہ داری کا مکمل احساس ہے اور نیب کے افسران مکمل جفاکشی سے کیس کی کاروائیوں میں مصروف عمل ہیں۔

ڈی جی نیب لا ہور

مزید : صفحہ آخر