پنجاب میں غیر قانونی نمبر پلیٹس تیار اور نصب کرنے والوں کیخلاف کریک ڈاؤن شروع

پنجاب میں غیر قانونی نمبر پلیٹس تیار اور نصب کرنے والوں کیخلاف کریک ڈاؤن ...

 لاہور(جنرل رپورٹر)غیر قانونی نمبرپلیٹس بنانے والوں اور لگانے والے گاڑی مالکان کے خلاف کریک ڈاؤن شروع کر دیا گیا۔سپیشل مانیٹرنگ یونٹ لا اینڈ آرڈر کے سینئر ممبر سلمان صوفی نے ڈی آئی جی آپریشنز ڈاکٹر حیدر اشرف،ڈی جی ایکسائز اینڈنارکوٹکس کنٹرول محمد اکرم اشرف گوندل کے ہمراہ آغا اسلم ہال ڈی جی پی آر میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے بتایا کہ پنجاب سیف سٹی اتھارٹی ٹیکسیشن اینڈ نارکوٹکس کنٹرول ڈیپارٹمنٹ ،سی سی پی او لاہور اور ایس ایم یو لا اینڈ آرڈر کے اشتراک سے جعلی نمبر پلیٹ لگانے والے گاڑی مالکان اور ایسی نمبر پلیٹس بنانے والے افراد کے خلاف کے قانونی کارروائی عمل میں لائی جائے گی کیونکہ جعلی اور غیر نمونہ نمبر پلیٹس کا استعمال دہشت گردی اور جرائم میں معاونت کا سبب ہے۔انہوں نے بتایا کہ سماج دشمن عناصر جعلی نمبر پلیٹ استعمال کرکے اپنے مذموم مقاصد میں کامیابی حاصل کرتے ہیں۔سلمان صوفی نے پریس کانفرنس میں تفصیلات بیان کرتے ہوئے بتایا کہ غیر قانونی طور پر گرین نمبر پلیٹ استعمال کرنے والے 24978 گاڑی مالکان کو 4995600 روپے جرمانہ عائد کیا جا چکا ہے جبکہ غیر نمونہ 4976غیر مجاز پولیس نمبر پلیٹس استعمال کرنیوالوں کو 14لاکھ92ہزار سے زائد جرمانہ ادا کرنا پڑا۔116732گاڑیوں کو نمبر پلیٹ نہ لگانے پر ساڑھے تین کروڑ سے زائد جرمانہ عائد کیا گیا جبکہ جعلی نمبر پلیٹ لگانے والی 30223گاڑیوں کو 60لاکھ44ہزار روپے جرمانہ ادا کرنا پڑا جبکہ اس مہم میں وزیراعلی کی ہدایت پر مزید تیزی لائی جارہی ہے اور قانون توڑنے والوں سے نرمی نہیں برتی جائے گی۔ڈی جی ای ٹی اینڈ این سی نے آٹھ ہفتوں سے جاری کریک ڈاؤن مہم کا جائزہ پیش کرتے ہوئے بتایا کہ اس دوران ڈھائی لاکھ سے گاڑیوں کا پورے صوبے میں معائنہ کیا گیا اور جس سے 11کروڑ70لاکھ روپے کا ریونیو حاصل ہوا۔صرف لاہور میں جعلی نمبر پلیٹ والی 1لاکھ 80ہزار سے زائد گاڑیاں اور بغیر نمبر پلیٹ والی 3ہزار سے زائد گاڑیاں موجود ہیں۔اسی کے تدارکے لئے جعلی نمبر پلیٹس کو لائسنس نمبر پلیٹ سے تبدیل کیا جارہا ہے۔انہوں نے بتایا کہ فرید کورٹ ہاؤس کے گردونواح میں لاہور پولیس کی معاونت سے جعلی نمبر پلیٹ بنانے والی22دکانوں کا معائنہ کرکے 1700نمبر پلیٹ قبضے میں لے لی گئیں۔ڈی آئی آپریشنز ڈاکٹر حیدراشرف نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ اس ماہ ٹریفک پولیس، ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن لاہور پولیس اور ایس ایم یو کی معاونت سے جعلی نمبر پلیٹ بنانے اور لگانے والوں کے خلاف زیروٹالرنس آپریشن کیا جارہا ہے کیونکہ ایسی تمام گاڑیاں سیف سٹی اتھارٹی کے نصب کردہ کیمروں کی زد میں نہیں آتیں اورایکسائز اینڈ ٹیکسیشن کے ریکارڈ میں موجود نہ ہونے کی وجہ سے جرائم پیشہ افراد اس سے فائدہ اٹھا سکتے ہیں۔2016سے پہلے ایشو ہونے والی نمبر پلیٹس کو وارننگ جاری کی جارہی ہے جبکہ دوسری گاڑیوں کو جرمانہ کیا جائے گا۔ڈی جی ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن محمد اکرم گوندل نے بتایا کہ یہ یکم فروری کے بعد جعلی نمبر پلیٹ لگانے والوں کے خلاف ایف آئی آر بھی درج کی جا سکے گی۔

جعلی نمبر پلیٹ

مزید : صفحہ آخر