فرد برائے ملکیت جاری کرنے سے انکار، والٹن راضی سنٹر کے انچارج کا خاتون ایس سی او پر بہیمانہ تشدد

فرد برائے ملکیت جاری کرنے سے انکار، والٹن راضی سنٹر کے انچارج کا خاتون ایس ...

لاہور(اپنے نمائندے سے)شناختی کارڈ کی فوٹو کاپی پر فرد برائے ملکیت جاری کرنے سے انکار پر والٹن اراضی سنٹر کے سروس سنٹر انچارج کا خاتون ایس سی او پر بہیمانہ تشدد ،خاتون بے ہوش ہو گئی،حکام بالاکو واقعہ سے لاعلم رکھ کر سروس سنٹر آفیشل کو بچا لیا گیا ،پورے پنجاب میں اراضی ریکارڈ سنٹرز سٹاف کی تشدد واقعہ کی شدید الفاظ میں مذمت ،کارروائی کا مطالبہ کر دیا،واقعہ کی انکوائری کے بعد قانون کے مطابق کارروائی کی جائے گی ترجمان پنجاب لینڈ ریکارڈ اتھارٹی تفصیلات کے مطابق کرپشن ،رشوت وصولی اور پرائیویٹ افراد کے اراضی ریکارڈ سنٹر سٹاف پر متعدد واقعات اور سکینڈلز کے بعد اراضی ریکارڈ سنٹر کا عملہ آپے سے باہر ہو گیا ہے جہاں والٹن اراضی ریکارڈ سنٹر کے سروس سنٹر آفیشل ندیم عباس نے تحصیل کینٹ میں مداخلت کرتے ہوئے وہاں تعینات سروس سنٹر آفیشل حنا علی کو موضع جنگ سنگھ والا میں اقبال بیگم نامی خاتون کے کھاتے کی فرد برائے ملکیت صرف شناختی کارڈ کی فوٹو کاپی پر جاری کرنے کا کہا ،خاتون آفیشل نے قوانین کے مطابق اصل مالک اور اصل شناختی کارڈ کے بعد فرد برائے ملکیت جاری کرنے کی بات کی تو سروس سنٹر آفیشل ندیم عباس مشتعل ہو گیا اور خاتون آفیشل کو نازیبا الفاظ،گالیاں اور تشدد کا نشانہ بنا شروع کر دیا ،شدید تشدد سے خاتون آفیشل بے ہو گئی جس کو فوری طور پر ریسکیو 1122کی طرف سے طبعی امداد دی گئی ،ذرائع کے مطابق اقبال بیگم نامی جس خاتون کے نام کی فرد برائے ملکیت جاری کرنے پر جھگڑا ہوا ہے یہ خاتون سینکڑوں کنال اراضی کی مالک ہے اوربیوہ ہے جس کی جائیداد ہتھیانے کے لئے قبضہ مافیا ہر وقت متحرک ہے اور متعدد بار اسی خاتون کی فرد برائے ملکیت جاری کروانے کی کوشش کی گئی ہے ناکامی پر اب مبینہ طور بھاری رشوت کے عوض والٹن اراضی ریکارڈ سنٹر کے سروس سنٹر آفیشل ندیم عباس کی خدمات حاصل کی گئیں ہے ،خاتون پر تشدد کے واقعہ کو حکام بالا اور افسران کے نوٹس میں لائے بغیر دبا دیا گیا ہے تاکہ سروس سنٹر آفیشل کو بچایا جاسکے ،تشدد کے واقعہ کی اطلاع پورے پنجاب میں واقع اراضی ریکارڈ سنٹر عملہ میں شدید غم وغصہ کی لہر دوڑ گئی ہے سٹاف نے مطالبہ کیا ہے کہ خاتون آفیشل پر تشدد میں ملوث سروس سنٹر آفیشل کو فوری طور پر قانون کے کٹہرے میں لا کر کارروائی کی جائے تاکہ عورت کی حرمت برقرار رہنے کے ساتھ ساتھ ادارہ ایک اور سکینڈل کی نظر نہ ہو جائے ۔پنجاب لینڈ ریکارڈ اتھارٹی کے ترجمان نے کہا ہے خاتون پر تشدد کا واقعہ قابل مذمت بات ہے ،واقعہ کی پوری انکوائری کے بعد قانون کے تمام تقاضوں کو پورا کیا جائے گا۔

بہیمانہ تشدد

مزید : صفحہ آخر