جج اور وکیل کیلئے ایک دوسرے کی عزت کرنا فرض ہے، بہادر علی خان

جج اور وکیل کیلئے ایک دوسرے کی عزت کرنا فرض ہے، بہادر علی خان

ملتان (خبر نگار خصوصی) ڈسٹرکٹ اینڈسیشن جج ملتان بہادرعلی خان نے کہاہے کہ جج یا وکیل ہونااللہ کی تقسیم ہے لیکن دونوں کالا(بقیہ نمبر11صفحہ12پر )

کوٹ پہنتے ہیں اس لئے ایک دوسرے کی عزت کرنافرض ہے اوراپنے فرائض اس طرح اداکرنے چاہئیں کہ روزانہ اپناکام ختم کرکے گھر جاتے وقت یہ اطمینان ہوکہ حلال کمائی لے کر جارہے ہیں۔ان خیالات کا اظہارانھوں نے گزشتہ روز ملتان سے ریٹائرہونے والے ججز کے اعزازمیں ڈسٹرکٹ بارملتان کی جانب سے منعقدہ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیاہے۔انھوں نے مزید کہاکہ بارکی جانب سے ریٹائرہونے والے ججز سے جس محبت اوراحترام کا اظہارکیا گیا ہے ان کا دل بھی کررہاہے کہ آج ہی ریٹائر ہوجائیں اورریٹائرہونے والوں کے اعزاز میں اس طرح کی تقریبات کرناصرف ملتان بارکا ہی خاصہ ہے جس پر ملتان بارخراج تحسین کی مستحق ہے۔قبل ازیں خطاب کرتے ہوئے سابق جج انسداددہشت گردی کی خصوصی عدالت ملتان چوہدری محمد اکرم نے کہاکہ اپنی 30 سالہ ملازمت میں ملتان بارجیسی تعاون کرنے والی قابل بارنہیں دیکھی ہے اور اب وکلاء میں واپس آرہے ہیں اوروکلاء تحریک میں بھی متحرک رکن کا کرداراداکریں گے۔ انھوں نے کہاکہ انھیں ہمیشہ سخت جج کہاگیا ہے جبکہ انھوں نے عدالت کے باہر کبھی کسی کی نہیں سنی ہے اورعدالت میں سب کی سنی ہے اورکبھی کسی کو اتنی مہلت نہیں دی کہ ان پر دباؤ ڈال سکے۔سابق جج لیبرکورٹ ملتان اسلم پرویز گوریجہ نے کہا کہ ہمیشہ ملازمت میں اچھا کام کرنے کی کوشش کی ہے اور اسی وجہ سے آج وکلاء نے ان کیاعزازمیں تقریب منعقد کی ہے جس پر شکرگذارہیں۔صدرڈسٹرکٹ بارعظیم الحق پیرزادہ نے کہاکہ تقرری،تبادلہ اور ریٹائرمنٹ ملازمت کا حصہ ہے جبکہ آنے والوں کوخوش آمدیدکہنااورجانے پردعاؤں میں رخصت کرنابارکی روایت ہے۔عدل کے نظام میں وکالت سے جج بنناپھر وکالت میں آنا سسٹم کی خوبصورتی ہے جس میں کالاکوٹ اورعدالتیں وہی رہتیں ہیں اوریہ رشتہ زندگی بھر ختم نہیں ہوتاہے۔انھوں نے کہاکہ پالیسی کے مطابق وکلاء4 انصاف کی فراہمی میں اہم کرداراداکرتے ہیں اوریہ کوششیں جاری رہیں گی اورایک دن ملک میں انصاف کا بول بالاہوگازیرالتواء مقدمات کی تعدادمیں کمی ہوگی جس میں صرف دونوں طرف تواز ن برقراررکھنے اورکالیکوٹ کا تقدس بحال رکھنے کی ضرورت ہے۔تقریب سے سابق صدور سید اطہرحسن شاہ بخاری اوراللہ دتہ کاشف بوسن نے بھی خطاب کیا۔تقریب میں فاضل ججز کو پھولوں کے گلدستے اورکتابوں کے تحائف بھی پیش کئے گئے ہیں۔

بہادر علی خان

ملتان(خبرنگار خصوصی )ڈسٹرکٹ اینڈسیشن جج ملتان بہادر علی خان نے کہاہے کہ ملک میں جیسے بھی حالات ہوں بارایسوسی (بقیہ نمبر10صفحہ12پر )

ایشنز جمہوریت کے لئے تگ ودو کرتی رہتی ہیں اورہرسال انتخابا ت کا انعقاد کرایاجاتاہے جو جمہوری روایات کا تسلسل ہے۔ان خیالات کااظہارانھوں نے گزشتہ رات ڈسٹرکٹ بارکے سالانہ عشائیہ سے خطاب کرتے ہوئے کیاہے۔انھوں نے مزیدکہاکہ ڈسٹرکٹ باراپنے اقدامات اورسینئروکلاء کی خدمات کے اعتراف پر خراج تحسین کی مستحق ہے۔انھوں نے کہاکہ ہمیں اپنے سینئروکلاء کی نصیحتوں پرعمل کرنے کے ساتھ ان کے تجربات سے بھی فائدہ اٹھاناچاہیئے تاکہ ہم اس میدان میں کامیاب ہو سکیں۔انھوں نے کہاکہ ایک لمبے عرصے کے بعد بارمیں نئی روایت کا آغاز ہوگیاہے جس کے تحت سینئروکلاء کو اعزازبخشاگیاہے۔قبل ازیں خطاب کرتے ہوئے صدرڈسٹرکٹ بار ایسوسی ایشن ملتان عظیم الحق پیرزادہ نے کہاکہ آج تقر یب میں سینئروکلاء کو سٹیج پربٹھاکراورتحریک چلاکران لوگوں کو پیغام دیا گیاہے جو میرٹ کا بہانہ بناکرجنوبی پنجاب کے لوگوں کے حقوق پر ڈاکہ ڈالتے ہیں اورانھیں بتادیناچاہتے ہیں کہ سٹیج پر بیٹھے ان وکلاء کی کتابیں پڑھ کر وہ انصاف کے ایوانوں میں کرسیوں پر براجمان ہیں اوروہ حکمران جو وکلاء کی بے مثال تحریک کی بدولت اقتدارکی منزل پر پہنچے ہیں اور وہ تحریک صرف ملتان بارکی وجہ سے کامیاب ہوئی اورآج انہی وکلاء کو میرٹ پرنہ ہونے کا بہانہ بناکر نظرانداز کیاجاتاہے۔انھوں نے کہاکہ اگر جنوبی پنجاب کونظرانداز کرنے کی پالیسی جاری رکھی گئی تو جان لیں ہم حقوق چھین لینا بھی جانتے ہیں کیونکہ یہاں مانگنے سے حقوق نہیں ملتے ہیں اوراپنے حق کوکسی صورت نہیں چھوڑیں گے۔انھوں نے کہاکہ اپنے دوراقتدار میں باراوربینچ میں توازن رکھنے اورانصاف کی فراہمی میں بہترین کرداراداکرنے کی کوشش کی گئی ہے۔جنر ل سیکرٹری بارمحمدعمران خان خاکوانی نے کہاکہ سال بھر میں وکلاء کے لئے کئی ترقیاتی کام کرائے گئے اوربارکو مستقل بنیادوں پرآمدن فراہم ہونے کے بھی اقدامات کئے گئے ہیں اس طرح بارمیں چیمبروں کی کمی دورکرنے کے لئے نئے بلاک کا قیام کیاگیا ،وائی فائی اورجدید ڈسپنسری قائم کی گئی ہے۔اس موقع پر سینئر وکلاء محمد حسین جہانیہ ،چوہدری محمد شفیق اورمرزاعزیز اکبر بیگ نے بھی خطاب کیا۔تقریب کو 50 سال سے زائد پریکٹس کرنے والے وکلاء کے نام کرکے انھیں سٹیج پربٹھایاگیااوران وکلاء کو اعزازی شیلڈز بھی دی گئیں۔دریں اثناء ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج ملتان بہادرعلی خان،ڈپٹی کمشنرنادرچٹھہ،جج بنکنگ کورٹ شاہد اسلام غلزئی ،ایس پی کینٹ سیف اللہ خٹک،ایس ایچ اوتھانہ چہلیک بشیرہراج،ڈاکٹر رفیق بھٹہ ،ڈاکٹر سرورچوہدری،ڈاکٹر صفدراقبال ہاشمی،ڈاکٹر اسد اریب،ٹریفک وارڈن قیصر رفیق کو بھی بارکے لئے خدمات پراوربارعہدیداران کو اعزازی شیلڈز دی گئیں ہیں۔تقریب میں سیکورٹی کے لئے فول پروف انتظامات کئے گئے تھے۔تقریب کے آغاز سے اختتام تک الیکشن میں حصہ لینے والیامیدوار اپنے حامیوں کے ہمراہ مرکزی راستہ پر براجمان رہے۔

مزید : ملتان صفحہ آخر