سانحہ اورنج ٹرین لیبر کیمپ،کوٹ ادو کے4مزدوروں کی لاشیں ورثاء کے سپرد

سانحہ اورنج ٹرین لیبر کیمپ،کوٹ ادو کے4مزدوروں کی لاشیں ورثاء کے سپرد

کوٹ ادو(تحصیل رپورٹر،نامہ نگار) لاہور محمود بوٹی انٹر چینج مناواں کے علاقہ میں اورنج ٹرین منصوبہ میں کام کرنے والی الحبیب کنسٹرکشن کمپنی کے اورنج ٹرین لیبر کیمپ میں سلنڈر کے پھٹنے سے لگنی والی آگ سے جھلس کر جاں بحق ہونے والے تھہیم برادری کے 4 مزدور دلاور ولد محمد اشرف،(بقیہ نمبر13صفحہ12پر )

ندیم ولد مرید حسین ، بلال ولد عبدالستار اور ساجد عرف ببلو ولد عبدالمجید کے والدین گزشتہ شب میتیں حاصل کرنے کیلئے لاہور پہنچ گئے جہاں ضروری کاروائی کے بعد 20گھنٹے بعد نعشیں انکے حوالے کر دی گئیں،نعشوں کو غسل دینے کے بعد الحبیب کمپنی میں انکی نماز جنازہ ادا کی گئی اس کے بعد چاروں مییتوں کو بذریوہ ایمبولیس انکے آبائی گاؤں کوٹ ادو لا یا جارہا ہے اور رات گئے انکی مییتیں آبائی گاؤں پہنچ گئی ہیں جہاں آج صبح10بجے انکی نماز جنازہ مکھن چوک تونسہ موڑ پر ادا کی جائے گی، حادثہ کے کئی گھنٹے گزرنے کے بعد نعشیں ورثاء کے حوالے نہ کرنے پر تھہیم برادری کے سینکڑوں لوگوں نے تونسہ موڑ پر احتجاج بھی کیا اور 2گھنٹے مین شاہراہ بلاک کئے رکھی، دوسری طرف جاں بحق ہونے والے مزدور بلال تھہیم کا بڑا بھائی محمد رمضان جو بھی اسی کمپنی میں کام کرتا تھا جس نے آتش زدگی کے وقت تیسری منزل سے چلانگ لگادی تھی جسکی ٹانگیں متاثر ہیں جبکہ آگ سے اسکی ایک سائیڈ اور ایک بازو بری طرح جھلس گیا تھا کی حالت بھی غیر بتائی جا رہی ہے،اس بارے جاں بحق ہونے والے مزدوروں دلاور اور ندیم کے ماموں اور بلال کے چچا خالد تھہیم جو کہ مذکورہ کمپنی میں فورمین ہے نے بتایا کہ تحصیل کوٹ ادو سے انکی برادری کے تقریبا50سے زائد مزدور کام کرتے ہیں ،مذکورہ کمپنی نے مزدوروں ک رہائش کیلئے تیسری منزل پر 30کے قریب کیمپ لگائے ہوئے تھے جہاں مزدور شفٹ میں کام کرنے کے بعد وہاں آرام کرتے تھے اور کھانا پکانا کرتے تھے مزدوروں نے ہر کیمپ میں اپنے سلنڈر بھی رکھے ہوئے تھے،حادثہ کے وقت ایک سلنڈر کا پائپ لیک ہوا جس سے آگ بھڑکی اور اسی کیمپ کو لگنے کے بعد باقی تمام کیمپوں کو اپنی لپیٹ میں لے لیا ،وہ حادثہ کے وقت اسی منزل پر موجود تھا اور بغیر جوتے وہ نیچے بھاگ گیا حادثہ کے وقت وہاں پر 60کے قریب مزدور موجود تھے اور آگ لگنے کے بعد اکثر مزدوروں نے تیسری منزل سے جمپ لگائے،انہوں نے کہا کہمذکورہ کمپنی کی نا اہلی کی وجہ سے تیسری منزل پر رہائش کمپنی کی بے وقوفی ہے کا روائی کرکے ذمہ داران کے خلاف مقدمہ درج کیا جائے۔

لاشیں

مزید : ملتان صفحہ آخر