خانیوال‘ بی اے بی ایس سی کے داخلے نہ بھیجنے کیخلاف طالبات کا احتجاج ‘ روڈ بلاک

خانیوال‘ بی اے بی ایس سی کے داخلے نہ بھیجنے کیخلاف طالبات کا احتجاج ‘ روڈ ...

خانیوال(بیورونیوز، نمائندہ پاکستان، ڈسٹرکٹ رپورٹر) گورنمنٹ گرلز ڈگری کالج میں بی ایس سی ،بی اے کے داخلہ فارم نہ بھیجے ایک ہزار روپے فی طلبہ وصول کرنا شروع کر دیا طلبہ احتجاج کرنے پر مجبور تفصیل کے مطابق گورنمنٹ گرلز ڈگری کالج کی پروفیسر میڈم خالدہ نے بی ایس سی ،بی اے(بقیہ نمبر45صفحہ12پر )

کے داخلہ فارم نہ دینے ایک ہزار روپے وصول کرنے شروع کر دیئے ۔طالبات احتجاج کرنے پر مجبور ہو گئی طلبہ نے کالج کی پرنسپل سے مطالبہ کیا کہ تما م طلبہ سے ایک ہزار روپے وصول کیئے جارہے ہیں تو کالج کی پر نسپل نے کہا کہ میڈم خالدہ سے ہی بات کریں وہ ہی انچارج ہیں ۔طلبہ نے کالج کے سامنے مین گیٹ پر احتجاج کیا تو میڈم خالدہ نے کہا کہ جو مرضی کر لو میرا کوئی کچھ نہیں بگاڑ سکتا طلبہ کو نام خارج اور کالج سے نکالنے کی دھمکیاں اور صحافیوں سے غیر ذمہ دارانہ سلوک اور کہا کہ پیسے تو تمہیں دینے ہی پڑیں گے جس مرضی کو بلالو میں کسی سے نہیں ڈرتی اِس پر گورنمنٹ گرلز کالج کی طلبہ نے روڈ بلاک کر کے کالج احتجاج کیا اور ای ڈی او ایجوکیشن اور ڈی او ایجوکیشن سے پر زورمطالبہ کیا ہے کہ ناجائز رقم وصول نہ کی جائے تاکہ ہم اپنی تعلیم کو مسلسل جاری رکھ سکیں کالج ذرائع کے مطابق یونیورسٹی میرٹ پر اترنے والی تمام طالبات کے داخلے بھیجے جارہے ہیں ۔

مزید : ملتان صفحہ آخر